ستمبر کے دوران چین کے زر مبادلہ کے ذخائر میں17 ارب ڈالر کا اضافہ

بیجنگ: چین نے کہا ہے کہ ستمبر کے دوران اس کے زر مبادلہ کے ذخائر کی مالیت 31 کھرب 8 ارب 50کروڑ ڈالر تک جا پہنچی جو اگست کے مقابلے میں 0.5 فیصد اضافہ ہے۔

بینک آف چائنہ کی جانب سے جاری تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق ستمبر کے اختتام پر ملکی زر مبادلہ کے ذخائر کی مالیت 31 کھرب 8 ارب 50کروڑ ڈالر تک جا پہنچی جو اگست کے مقابلے میں 0.5 فیصد (17 ارب ڈالر ) اضافہ ہے۔ پچھلی تین سہ ماہیوں کا جائزہ لیا جائے تو چین کے زر مبادلہ کے ذخائر کی مالیت میں رواں سال جنوری سے مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔

قومی زر مبادلہ کے انتظامی بیورو کے اہلکار کا کہنا ہے کہ رواں سال چین کی معیشت اور مالیاتی صورتحال مستحکم رہی اور یہ چین کے زر مبادلہ کے ذخائر میں اضافہ ہونے کی بنیادی ضمانت ہے۔ بتایا گیا ہے کہ رواں سال پہلی تین سہ ماہیوں کے دوران چین کی معیشت کی شرح اضافہ نے مناسب رفتار برقرار رکھِی ، اس دوران اشیا کا معیار اور کارخانوں کی کارگردگی بہتر ہوتی رہی.

اس کے ساتھ ساتھ چینی کرنسی آرایم بی اور امریکی ڈالرز کے درمیان شرح تبادلہ بنیادی طور پر مستحکم رہی اور بین الاقوامی آمدنی اور ادائیگیوں میں بھی توازن رہا۔

مصنف کے بارے میں