بھارت ریاستی دہشت گردی سے باز نہ آیا، 17 کشمیری نوجوان شہید

بھارت ریاستی دہشت گردی سے باز نہ آیا، 17 کشمیری نوجوان شہید

سری نگر: مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجیوں نے ریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائیوں کے دوران ایک دن میں 17 کشمیری نوجوان شہیدکر دیے جبکہ کم از کم 100زخمی ہوگئے ۔


کشمیر میڈیا سروس کے مطابق قابض بھارتی فورسز نے اسلام آباد اور شوپیاں کے اضلاع میں سرچ آپریشن کے نام پر بربریت کا مظاہرہ کیا اور فائرنگ کے نتیجے میں 16 کشمیری نوجوان شہید اور 100 سے زائد زخمی ہوئے۔بھارتی فوج کی فائرنگ سے زخمی ہونے والا ایک اور کشمیری نوجوان اقبال بھٹ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا جس کے بعد شہداءکی تعداد 17 ہوگئی۔

ڈائریکٹر جنرل پولیس ایس پی وید نے دعویٰ کیا ہے کہ جنوبی کشمیری اضلاع میں بھارتی سیکیورٹی فورسز سے مقابلے کے 2 مختلف واقعات میں 12 نوجوان ہلاک ہوئے جن میں ایک کمانڈر بھی شامل ہے۔ سرچ آپریشن کے دوران بھارتی فورسز کے 3 اہلکاروں کے زخمی ہونے کا بھی دعویٰ کیا گیا ہے جب کہ علاقے میں انٹرنیٹ اور ٹرین سروس بھی معطل کردی گئی ہے۔دوسری جانب کشمیری نوجوانوں کے قتل پر حریت قیادت نے 2 روزہ ہڑتال کا اعلان کیا ہے جب کہ کشمیر یونیورسٹی کے طالبعلموں نے شدید احتجاج کرتے ہوئے ا?زادی کے حق میں اور بھارت مخالف نعرے بھی لگائے۔