وائٹ ہاؤس کے ڈائریکٹر کمیونیکیشن عہدے سے برطرف

وائٹ ہاؤس کے ڈائریکٹر کمیونیکیشن عہدے سے برطرف

واشنگٹن: وائٹ ہاؤس کے ڈائریکٹر کمیونیکیشن' انتھونی اسکارا موچی 'کو 10روز کے بعد ہی ان کے عہدے سے برطرف کر دیا گیا۔ ڈائریکٹر کمیونیکیشن کی عہدے سے برطرفی کی خبر وائٹ ہاؤس کے نئے چیف آف اسٹاف' جان کیلی 'کے عہدے سنبھالنے کے چند گھنٹوں کے بعد سامنے آئی ہے۔ 'اسکارا موچی' کی جانب سے ساتھی اہلکاروں پر بے جا تنقید ان کی برطرفی کی وجہ بنی۔


نیو یارک ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق جان کیلے نے وائٹ ہاؤس کے چیف آف اسٹاف کی ذمہ داریاں سنبھالتے ہی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے اسکارموچی کو عہدے سے ہٹانے کی درخواست کی تھی۔

امریکی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق اسکار موچی نے اپنا استعفیٰ جان کیلے کو پیش کیا اور ان سے درخواست کی کہ انہیں دوبارہ سے امریکا کے ایکسپورٹ امپورٹ بینک کا چیف اسٹریٹجی آفیسر تعینات کر دیا جائے۔

واضح رہے کہ چند روز قبل اینتھونی اسکارموچی نے وائٹ ہاؤس کے چیف آف اسٹاف رینس پری بس کو ذہنی بیماری میں مبتلا پاگل شخص قرار دیتے ہوئے ان پر صحافیوں کو معلومات افشاں کرنے کا الزام بھی عائد کیا تھا جس پر ڈونلڈ ٹرمپ نے اسی روز ایکشن لیتے ہوئے انہیں عہدے سے ہٹانے کا اعلان کر دیا تھا۔

اس کے علاوہ وائٹ ہاؤس کے پریس سیکرٹری شون اسپائسر نے بھی چند روز قبل ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے اسکار موچی کو ڈائریکٹر کمیونیکیشن وائٹ ہاؤس تعینات کرنے پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں