پیرس جیکسن نے اپنے ساتھ جنسی زیادتی کا اعتراف کیا

نیویارک: امریکا کے آنجہانی گلوکار مائیکل جیکسن کی بیٹی پیرس جیکسن نے اپنے ساتھ جنسی زیادتی کا اعتراف کیا ہے۔

پیرس جیکسن نے اپنے ساتھ جنسی زیادتی کا اعتراف کیا

نیویارک: امریکا کے آنجہانی گلوکار مائیکل جیکسن کی بیٹی پیرس جیکسن نے اپنے ساتھ جنسی زیادتی کا اعتراف کیا ہے۔


امریکی جریدے ’’رولنگ اسٹون‘‘ کو دیئے گئے انٹرویو میں 18 سالہ پیرس جیکسن کا کہنا تھا کہ والد کی وفات نے ان کی زندگی اور صحت پر گہرے نفسیاتی اثرات مرتب کیے، وہ 2009 میں والد کی پراسرار موت کے بعد کئی سال تک ذہنی پریشانی کا شکار رہیں۔جنسی زیادتی سے متعلق پوچھے گئے سوال پر پیرس جیکسن نے کہا کہ وہ اس افسوسناک واقعہ کی تفصیل میں نہیں جانا چاہتیں مگر یہ ان کی زندگی کا بہت ہی المناک واقعہ تھا، اس کے علاوہ انٹرنیٹ پر بھی جنسی ہراساں کرنے کی کوشش کی گئی، عصمت دری کے واقعے کے وقت ہی فیصلہ کر لیا تھا کہ اس بارے میں کبھی کسی سے بات نہیں کروں گی۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ زیادتی کے بعد سے اس قدر نفسیاتی الجھن کا شکار تھی کہ والد کی وفات سے قبل گھر چھوڑنے پرغورکررہی تھی۔

پیرس جیکسن نے بتایا کہ والد کی وفات اور جنسی زیادتی کے بعد اس قدر اعصابی تناؤ کا شکار تھی کہ خود سے بھی نفرت ہونے لگی تھی اور اسی باعث 2013 میں کئی بار خود سوزی کی کوشش بھی کی۔