امریکی فوج نے سال نو پر بم برسائے جانے کے بیان پر معافی مانگ لی

امریکی فوج نے سال نو پر بم برسائے جانے کے بیان پر معافی مانگ لی
اس ٹوئٹ کے بعد امریکی فوج کو صارفین کی جانب تنقید کا سامنا کرنا پڑا۔۔۔۔۔۔فوٹو/ ٹوئٹر

واشنگٹن: امریکی فوج نے سال نو پر بم برسائے جانے والے بیان پر معافی مانگ لی۔امریکی فوج نے سال نو 2019 پر سماجی رابطہ ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایک تصویر جاری کی تھی جس میں ایک جہاز کو بم برساتے دکھایا گیا تھا۔


ٹوئٹ میں امریکی فوج کے ترجمان کی جانب سے لکھا گیا ’ہر سال کی طرح ٹائمز اسکوائر پر بڑی گیندیں برسانے کی روایت ہے اگر کہیں ضرورت پڑی تو ہم اس سے کئی بڑی اور بڑی چیزیں برسانے کے لیے تیار ہیں۔ ‘

اس ٹوئٹ کے بعد امریکی فوج کو صارفین کی جانب تنقید کا سامنا کرنا پڑا اور وہ اپنے اس ٹوئٹ کو ڈیلیٹ کرنے پر مجبور ہو گئی۔ ٹوئٹ سے ایسا ظاہر ہو رہا تھا جیسے امریکا سال نو کا آغاز تباہیوں سے کرنا چاہتا ہے۔

امریکی اسٹریٹیجک کمانڈ نے اس کی جگہ نیا ٹوئٹ کرتے ہوئے معافی مانگی اور کہا کہ جس میں کہا گیا کہ’ اس سے قبل جاری کردہ بیان ہماری روایات کا عکاس نہیں جس پر معذرت خواہ ہیں۔ ‘