محکمہ تعلیم پنجاب نے سرکاری سکولوں کے اساتذہ کو موبائل فون رکھنے پر پابندی عائد کردی

محکمہ تعلیم پنجاب نے سرکاری سکولوں کے اساتذہ کو موبائل فون رکھنے پر پابندی عائد کردی
فائل فوٹو

لاہور:محکمہ تعلیم پنجاب نے سرکاری سکولوں کے اساتذہ کو موبائل فون رکھنے پر پابندی عائد کردی ۔


میڈیا رپورٹس کے مطابق محکمہ تعلیم پنجاب کی جانب سے جاری مراسلے کے مطابق تمام سرکاری اسکولوں کے پرنسپل اور ہیڈ ماسٹر صبح اسمبلی کے وقت اساتذہ کے موبائل جمع کریں گے اور سکول کے اوقات کار ختم ہونے کے بعد اساتذہ کو موبائل واپس ملے گا۔

مراسلے میں مزید کہا گیا کہ اساتذہ کے ساتھ طلبا بھی موبائل نہیں رکھ سکیں گے، موبائل فون سائلنٹ موڈ پر رکھنے سے بھی اساتذہ کی توجہ ہٹ جاتی ہے، اساتذہ اور طلبا کلاس روم، لیبارٹری سمیت سکول بلڈنگ میں موبائل نہیں رکھ سکتے۔

مراسلے میں کہا گیا تھا کہ سکول میں سمارٹ فونز کے استعمال سے طلبا کی پڑھائی متاثر ہورہی اسی لیے یہ فیصلہ کیا گیا۔ اب سکولوں میں صرف ایسے موبائل کے استعمال کی اجازت ہوگی جس میں انٹرنیٹ کی سہولت نہ ہو۔

اس سے قبل ملتان میں اساتذہ کے موبائل فون کے استعمال پر پابندی لگائی گئی تھی اور ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی نے سکول دورانیے میں اساتذہ کو اس کے استعمال سے منع کیا تھا۔ جس کی وجہ والدین کی شکایات بتائی جاتی ہیں۔

قبل ازیں ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی نے پنجاب بھرمیں اساتذہ کو موبائل فونز کے استعمال اور جینز زیب تن نہ کرنے کی ہدایت کی تھی۔خیال رہے کہ گزشتہ سال خیبر پختونخواکے ضلع مردان کے تمام سکولوں میں ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر نے سمارٹ فونز کے استعمال پر پابندی عائد کردی تھی۔