جہیز نہ لانے پر طعنوں کا شکار لڑکی کی خودکشی ، ویڈیو وائرل ہوگئی

جہیز نہ لانے پر طعنوں کا شکار لڑکی کی خودکشی ، ویڈیو وائرل ہوگئی
سورس:   File photo

ممبئی ،جہیز نہ لانے پر سسرال کے طعنوں سے تنگ لڑکی نے خودکشی کرلی ۔لڑکی نے خودکشی سے قبل گھر والوں کو ویڈیو کال کی جو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی ۔ 

تفصیلات کے مطابق بھارتی شہر احمد آباد سے تعلق رکھنے والی 23 سالہ عائشہ نے خودکشی سے قبل ماں باپ سے رابطہ کیا اور شوہر سے متعلق گفتگو کرنے کے بعد  ریور فرنٹ واک وے سے سبرمتی دریا میں چھلانگ لگاکر زندگی کا خاتمہ کرلیا ۔ 

 سوشل میڈیا پر وائرل ویڈیو میں عائشہ نے اپنی موت کا  سبب شوہر یا کسی کو بھی ٹھہرانے کے بجائے اپنی تقدیر کا لکھا قراردے دیا ۔

عائشہ نے خودکشی سےقبل ویڈیو میں اعتراف کیا کہ ان پر اس اقدام کے لیے کسی کی جانب سے بھی کوئی دباؤ نہیں ڈالا گیا جب کہ دریا میں کودنے سے قبل عائشہ نے والد کو شوہر کے خلاف دائر کیس واپس لینے کا کہا ۔

ویڈیو کال میں عائشہ کے والدین نے  اس انتہائی اقدام سے روکنے کے لیے ہر قسم کے وعدے قسمیں دیئے ۔

23 سالہ عائشہ کی شادی  2018 میں عارف خان نامی شخص کے ساتھ  ہوئی تھیں، شادی کے فوراً بعد ہی عارف اور ان کے گھروالوں کی جانب سے عائشہ کو جہیز کے لیے ہراساں کیا جانے لگا۔

جس کے بعد  عائشہ سسرال والوں کی باتوں سے تنگ آکر ماں باپ کے گھر واپس چلی گئی لیکن رشتے داروں کی مداخلت پر عائشہ کو ایک بار پھر سسرال واپس آنا پڑا۔

عائشہ کے والد نے داماد کو ڈیڑھ لاکھ روپے بھی دیئے  لیکن  اس کے باوجو د سسرال والوں کا رویہ نہ بدل سکا ْ۔کچھ بھی تبدیل نہ ہوسکا اور انہیں ایک بار پھر ماں باپ کے گھر جانا پڑگیا ۔