بہت خوش ہوں کہ ویٹ نے پاکستان سے بھی ویٹ کے نئے چہرے کا انتخاب کیا گیا

بہت خوش ہوں کہ ویٹ نے پاکستان سے بھی ویٹ کے نئے چہرے کا انتخاب کیا گیا

 بہت خوش ہوں کہ ویٹ نے پاکستان سے بھی ویٹ کے نئے چہرے کا انتخاب کیا گیا

کراچی: معروف اداکارہ و ماڈل ماہرہ خان ناپنی فلم کی شوٹنگ مکمل کر چکے ہے۔ شعیب منصور کے ساتھ کام کرنا ہمیشہ بہت اچھا لگتا ہے کیونکہ ان کے ساتھ سیکھنے کا عمل بہت تیز ہوتا ہے۔ اداکارہ ماہرہ خان نے کہا کہ وہ فلم’’ورنہ‘‘ میں مرکزی کردار کے بجائے معاون اداکار کے طور پر بھی کام کرنا پڑتا تو میں کرتی، میں نے اپنی پہلی فلم’’بول‘‘ ان کے ساتھ کی تھی، نہ صرف پہلی فلم بلکہ اداکاری کے میدان میں قدم شعیب منصور کے ساتھ رکھا تھا، وہ مجھے کوئی بھی کردار دیتے میں ضرور کرتی کیونکہ میں کسی بھی پروجیکٹ میں اس کی کہانی کو دیکھتی ہوں اور میرا ماننا ہے کہ شعیب منصور سے بہتر کہانی کوئی نہیں لکھ سکتا۔ماہرہ خان نے کہا کہ ’’ورنہ ‘‘کی شوٹنگ مکمل ہوچکی ہے، فلم مولا جٹ کے لیے پنجابی زبان سیکھ رہی ہوں، زبان کا کردار میں بڑا عمل دخل ہوتا ہے، تو پنجاب کے لب و لہجہ کو بہتر طور پر ادا کرنے کی کوشش کے لیے کوئی کمی نہیں چھوڑوں گی۔


ماہرہ نے کہا کہ پاکستانی ڈراموں میں کانٹینٹ کمزور پڑتا دکھائی دیتا ہے اگر کوئی مضبوط و جاندار کہانی آفر ہوئی تو ضرور ڈرامہ میں کام کرونگی، فی الوقت فلموں کی شوٹنگ، برینڈ کی شوٹنگ و دیگر عوامل میں مصروف ہوں۔اداکارہ نے کہا کہ بہت خوش ہوں کہ ویٹ نے پاکستان سے بھی ویٹ کے نئے چہرے کا انتخاب کیا گیا، کسی بھی برانڈ کے سفیرمنتخب ہوتے ہوئے تمام پہلو سے ضرور سوچتی ہوں، کیونکہ ہمارا توکام ہے لیکن میرا ویٹ پر اعتماد ہے اس لیے اس کا چہرہ بننے میں کوئی ہرج محسوس نہیں کرتی بلکہ یہ ایک بہت اچھا اقدام ہے میرے بعد دیگر فنکاروں کو بھی ویٹ فیس بننے کا موقع ملا۔

علاوہ ازیں اس تقریب کا افتتاح ماہرہ خان نے کیا جہاں پر انھوں نے نئی ویٹ گرل ’’ہمیشہ ریڈی ہے‘‘ کے بارے میں بتایا اور کہا کہ کس طرح اس برانڈ کے بارے میں انھیں معلوم ہوا۔ انھوں نے کہا کہ اس برانڈ سے منسلک ہونے پر مجھے بہت خوشی اور اعتماد ملا، انھوں نے کہا کہ ویٹ خواتین کو خود اعتمادی کے ساتھ آگے بڑھنے کا مثبت پیغام دیتی ہے۔