کورونا کیسز بڑھنے پر یوم علی کے جلوسوں پر پابندی

کورونا کیسز بڑھنے پر یوم علی کے جلوسوں پر پابندی
سورس:   file

اسلام آباد: این سی او سی نے ‏یو م حضرت   علی پر ہر قسم کے جلوسوں پر پابندی کا فیصلہ  کیاہے۔مجالس میں بھی محدود افراد ایس او پیز کے تحت شریک ہوں گے۔

این سی او سی  کا یوم حضرت علی کے حوالےسے اجلاس وفاقی وزیر منصوبہ بندی اور سربراہ این سی او سی  اسد عمر کی زیر صدارت ہوا۔ اجلاس میں ‏یوم حضرت   علی پر ہر قسم کے جلوسوں پر پابندی کا فیصلہ  کیاگیا۔

این سی او سی کے مطابق یوم حضرت علی  کی مجالس میں محدود افراد شریک ہوسکیں گے ۔ مجالس ایس او پیز پرعملدرآمد سے مشروط  ہوں گی ۔ 

اجلاس میں وزیر داخلہ شیخ رشید ، وزیر برائے مذہبی امور نور الحق قادری اور معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان  بھی اجلاس میں شریک تھے۔

واضح رہے کہ  پاکستان میں کورونا کی صورتحال دن بدن سنگین ہوتی جا رہی ہے۔ گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران بھی کورونا سے ڈیڑھ سو کے قریب مریض جاں بحق ہوگئے۔46 سو سے زائد نئے کیس رپورٹ ہے۔

این سی او سی کی طرف سے جاری کردہ اعدادوشمار کے مطابق   کوروناسے مزید 146   مریض جان کی بازی ہار گئےجس کے بعد ملک بھر میں کورونا سے اموات کی تعداد 17  ہزار 957     ہو گئی ۔

24 گھنٹے  میں 48ہزار  740  ٹیسٹ کئے گئے جن میں سے 4ہزار 696   افراد میں کورونا وائرس کی تشخیص ہو گئی۔اس طرح مثبت کیسز کی شرح9.63      فیصد رہی۔

دوسری طرف کورونا کی تیسری لہر بے قابو ہونے سے مختلف شہروں میں لاک ڈاؤن مزید سخت کیا جا رہا ہے۔ سندھ حکومت نے بین الصوبائی ٹرانسپورٹ بند کردی ہے۔ لاہور میں بھی آج اور کل مکمل لاک ڈاؤن ہوگا۔

لاہور میں مارکیٹس بند رہیں گی۔شہریوں کو بغیر کسی ضرورت کے گھر سے نکلنے کی اجازت نہیں ہوگی۔دیگر شہروں کو جانے والی ٹرانسپورٹ پر  بھی پابندی ہے۔واضح رہے کہ گزشتہ روز ملک بھر میں کورونا مثبت کیسز کی سب سے زیادہ شرح لاہور میں تھی جو 28 فیصد تھی۔

ادھر ملک بھر میں ویکسی نیشن کا عمل بھی جاری ہے۔ویکسی نیشن سنٹرز آج چھٹی ہونے کے باوجود کھلے رہیں گے۔50 سال سے زائد عمر کے افراد  کی واک ان ویکسی نیشن جاری ہے جبکہ 40 سے 49 سال کی عمر کے افراد کی رجسٹریشن ہو رہی ہے جن کی ویکسی نیشن 3 مئی سے شروع ہوگی۔