ملک بھر میں یوم عاشور عقیدت و احترام سے منایا جا رہا ہے

ملک بھر میں یوم عاشور عقیدت و احترام سے منایا جا رہا ہے

لاہور: لاہور، کراچی سمیت ملک بھر میں آج یوم عاشور عقیدت و احترام سے منایا جا رہا ہے۔ مختلف شہروں میں موبائل فون سروس معطل اور ڈبل سواری پر پابندی عائد ہے۔ جلوسوں کی سی سی ٹی وی کیمروں سے مانیٹرنگ کی جا رہی ہے اور ہیلی کاپٹرز کے ذریعے جلوسوں کی فضائی نگرانی بھی کی جائے گی۔ وزارت داخلہ میں خصوصی مانیٹرنگ سیل قائم کر دیا گیا جبکہ 10 اضلاع کو انتہائی حساس قرار دیا گیا ہے۔ راولپنڈی، اسلام آباد میٹرو سروس معطل ہے اور بغیر اجازت سبیلیں لگانے پر پابندی عائد کر دی گئی۔


ملک بھر سے تمام شہروں کے جلوس اپنے روایتی راستوں سے برآمد ہو کر اپنے مقررہ مقام پر اختتام پذیر ہونگے۔ جلوس کے راستوں میں بغیر اجازت پانی اور دودھ کی سبیلیں لگانے اور نیاز تقسیم کرنے کی اجازت نہیں ہو گی۔ سندھ حکومت کی جانب سے لکھے گئے خط کے مطابق 10 محرم الحرام کو بھی صوبے بھر میں موبائل فون سروس صبح 8 بجے سے رات 12 بجے تک معطل رکھی جائیگی۔

ترجمان وزیر داخلہ سندھ کے مطابق صوبے بھر میں 4 ہزار 281 ماتمی جلوس برآمد ہونگے اور 14 ہزار 563 مجالس منعقد کی جائینگے جبکہ تعزیوں کے ایک ہزار 552 جلوس برآمد ہونگے۔ کراچی میں محرم الحرام کا مرکزی جلوس مجلس کے بعد نشتر پارک سے برآمد ہو گا جو اپنے روایتی راستوں سے ہوتا ہوا حسینیاں ایرانیاں امام بارگاہ کھارادر پر اختتام پذیر ہوگا۔

آج دسویں محرم الحرام کا مرکزی جلوس امام بارگاہ شاہ خراساں نشتر پارک سے برآمد ہو گا۔ قانون نافذ کرنے والے اداروں کی جانب سے مرکزی مجلس اور جلوس کیلئے سکیورٹی کے خصوصی انتظامات کیے گئے ہیں۔ مرکزی جلوس کے ایم اے جناح روڈ پر آمد سے قبل بم ڈسپوزل اسکواڈ علاقے کی سوئپنگ کریگا۔

سندھ پولیس اور رینجرز کی جانب سے مرکزی مجلس اور جلوس کیلئے سکیورٹی کے خصوصی انتظامات کئے گئے ہیں۔ جلوس کے راستوں پر عمارتوں پر ماہر نشانہ باز تعینات ک ردئیے گئے ہیں۔ مرکزی جلوسوں کی مانیٹرنگ کیلئے تین کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر قائم کئے گئے ہیں جہاں سی سی ٹی وی کیمروں سے چار سو تہتر مقامات کی مانیٹرنگ کی جا رہی ہے۔

محکمہ داخلہ پنجاب نے لاہور اور راولپنڈی سمیت دس اضلاع کو انتہائی حساس قرار دیتے ہوئے ان اضلاع میں سیکورٹی کے سخت ترین انتظامات کو حتمی شکل دیدی ہے۔ وزارت داخلہ میں قائم خصوصی مانیٹرنگ سیل پورے ملک میں سکیورٹی صورتحال کو مانیٹر کریگا۔

لاہور میں 10 ویں محرم الحرام کا مرکزی جلوس نثار حویلی سے برآمد ہو گیا۔ جلوس روایتی راستوں سے ہوتا ہوا آج شام امام بارگاہ کربلا گامے شاہ پہنچ کر اختتام پذیر ہو گا۔

لاہور میں یوم عاشور کا مرکزی جلوس برآمد ہونے سے قبل نثار حویلی میں مجلس اعزا بپا کی گئی۔ ذاکرین نے واقعہ کربلا اور اہل بیت کے فضائل اور مصائب بیان کیے۔

مجلس کے بعد جلوس برآمد ہوا جبکہ جلوس کےشرکاء غم حسین میں نوحہ خوانی اور ماتم کر رہے ہیں۔ جلوس اندرون شہر میں اپنے روایتی راستوں سے ہوتا ہوا آج شام امام بارگاہ کربلا گامے شاہ پہنچ کر اختتام پذیر ہو گا۔

پشاور میں دسویں محرم الحرام کا مرکزی جلوس امام بارگاہ حسینہ ہال سے برآمد ہو گا۔ دسویں محرم الحرام کے سلسلے میں پولیس اور ضلعی انتظامیہ نے تمام سیکورٹی معاملات کو حتمی شکل دے دی ہے۔ صوبہ خیبر پختونخوا میں بھی سکیورٹی کے سخت انتظامات کیئے گئے ہیں۔ سی سی پی او کے مطابق پشاور میں تقریبا 120 ماتمی جلوس اور 300 سے زیادہ مجالس ہیں اور محرم الحرام میں دہشت گردی کا خطرہ موجود ہے۔

سی سی پی او کے مطابق فاٹا کے ساتھ سرحد پر پولیس تعینات کی جائے گی۔ بلوچستان میں کوئٹہ سمیت مختلف شہروں میں ماتمی جلوس نکالے جائیں گے۔ ڈی آئی جی کوئٹہ عبدالرزاق چیمہ کے مطابق شہر میں یوم عاشور پر پولیس کے 6 ہزار اہلکار ڈیوٹی انجام دیں گے اور حساس مقامات پر پولیس کے علاوہ ایف سی اہلکار بھی تعینات ہوں گے۔

ڈی آئی جی کوئٹہ کے مطابق شہر کے مختلف علاقوں میں  50سی سی ٹی وی کیمرے نصب کیے گئے ہیں جب کہ محرم الحرام کے جلوسوں کی فضائی نگرانی بھی کی جائیگی۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں