سپریم کورٹ نے ملک کرامت کھوکھر، ندیم بارا کی معافی قبول کر لی

سپریم کورٹ نے ملک کرامت کھوکھر، ندیم بارا کی معافی قبول کر لی
عدالت نے تحریک انصاف کے دونوں رہنماؤں کیخلاف انضباطی کارروائی کا حکم دے دیا۔۔۔۔۔۔۔فائل فوٹو

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے قبضہ گروپ منشا بم کی سفارش کرانے سے متعلق کیس میں ایم این اے ملک کرامت کھوکھر اور ایم پی اے ندیم بارا کی معافی قبول کر لی۔


سپریم کورٹ میں قبضہ گروپ منشا بم کے سفارش کرانے سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ ایم این اے ملک کرامت کھوکھر نے کہا مجھ سے غلطی ہوئی معافی دی جائے ۔ میری ساری برادری ہے اور میں معافی کا درخواستگار ہوں۔ چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا دیکھیں آئندہ ایسا نہ ہو اور ہم قانون سازوں کا احترام کرتے ہیں۔ دونوں شخصیات نے آئندہ پولیس پر اثرانداز نہ ہونے کا وعدہ بھی کیا۔

عدالت نے تحریک انصاف کے دونوں رہنماؤں کیخلاف انضباطی کارروائی کا حکم دے دیا۔ چیف جسٹس نے کہا تحریک انصاف دیکھے کہ اس کے رہنما جرائم پیشہ افراد کی حمایت کرتے ہیں۔

پنجاب پولیس نے عدالت کو بتایا کہ منشا بم کو ہم تلاش کر رہے ہیں ملا نہیں اور مختلف جگہوں پر چھاپے مارے ہیں۔ عدالت نے منشا بم کے چاروں بیٹوں طارق، فیصل، عامر، وقاص کے نام ای سی ایل پر ڈالنے کا حکم دے دیا۔ سپریم کورٹ نے کہا جن لوگوں کی زمینوں پر قبضے ہوئے ہیں انہیں واپس کی جائیں۔ ان کا مزید کہنا تھا ویسے تو وزیراعلیٰ ہمارے پیچھے پیچھے چلتے ہیں کل وزیراعلیٰ پنجاب نے بھی کہہ دیا کہ قبضہ گروپ کے خلاف کارروائی کریں گے انکا بیان خوش آئند ہے تاہم دیگر قبضہ گروپوں کے خلاف بھی کارروائی کی جائے۔