ملک سے باہر عیش کرنے والوں کو سمجھ نہیں آرہی کہ رسیدیں کہاں سے لائیں:صدر عارف علوی

ملک سے باہر عیش کرنے والوں کو سمجھ نہیں آرہی کہ رسیدیں کہاں سے لائیں:صدر عارف علوی

 اسلام آباد:صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ باہر عیش کرنے والوں کو سمجھ میں ہی نہیں آرہا کہ کس کس چیز کی رسید کہاں سے لائیں، پاکستان مسلم لیگ(ن)کے قائد نوازشریف کا نام لئے بغیر کہا کہ عدالتوں میں کسی چیز کو ثابت کرنا بہت ہی مشکل کام ہے، جو رقم لے کر باہر عیش کررہے ہیں ان لوگوں کی سمجھ میں ہی نہیں آرہا کہ کس کس چیز کی رسید کہاں سے لائیں گے۔

صدر عارف علوی نے کہا کہ کیش ٹرانزیکشن اب الیکٹرنک ٹرانزیکشن میں تبدیل ہورہی ہے جس سے معیشت میں بہتری آئے گی، بینکاری نظام پر صارفین کے اعتماد اور ڈیجیٹل بینکنگ سے معیشت کو دستاویزی بنانے میں مدد ملے گی اور اس ضمن میں بینکوں اور صارفین کے درمیان معاملات میں بینکنگ محتسب کے کردار سے متعلق آگاہی کی ضرورت ہے۔

صدر مملکت نے کہا کہ بینکنگ کے بہت سے شعبوں میں بہتری کی گنجائش موجود ہے، بینکنگ صارفین کو متعدد مسائل کا سامنا ہے۔بینکنگ صارفین کی مشکلات کے ازالہ کیلئے مربوط نظام کی ضرورت ہے۔بینکنگ سیکٹر میں معذور افراد کی ملازمتوں کا خاص خیال رکھاجائے۔

صدر عارف علوی نے کہا کہ احساس پروگرام کے ذریعے مستحق خواتین کے بینک اکائونٹ کھولے جارہے ہیں،جس کے ذریعے ان کو رقوم کی ادائیگی کی جائے گی۔ کیش ٹرانزیکشن اب الیکٹرنک ٹرانزیکشن میں تبدیل ہورہی ہے جس سے مستقبل میں مزید اضافہ ہوگااور اس عمل سے معیشت میں بہتری آئے گی۔