کراچی میں بارشوں کے بعد آگ نے تباہی مچا دی

کراچی میں بارشوں کے بعد آگ نے تباہی مچا دی

کراچی میں بارشوں کے بعد آگ نے تباہی مچا دی


کراچی: سائٹ ایریا  میں واقع چپل کی فیکٹری میں لگنے والی آگ کو 11 گھنٹے گزرجانے کے باوجود بجھایا نہیں جاسکا ۔ آگ بجھانے کے دوران 3 فائر فائٹرز زخمی ہوگئے جنہیں اسپتال منتقل کردیا گیا۔

سائٹ کے علاقے میں واقع چپل بنانے کی فیکٹری میں گزشتہ رات 8:30 بجے قریب آگ لگنے کی اطلاع پر فائر بریگیڈ کی دو گاڑیوں نے جائے وقوعہ پر پہنچ کر آگ پر قابو پانے کی کوشش کی ۔

آگ پر قابو پانے میں ناکامی اور اس کی شدت میں اضافے کے بعد آگ کو تیسرے درجے کی قرار دے کر شہر بھر سے فائربریگیڈ کو طلب کرلیا گیا۔

اس دوران 3 فائر فائٹرز بھی زخمی ہوئے جنہیں اسپتال منتقل کردیا گیا۔

عمارت کی پیچیدہ ساخت کے باعث آگ بجھانے میں مشکلات کا سامنا ہے۔ فیکٹری میں آگ کی شدت کے باعث دیواریں گرنا شروع ہوگئیں اور کچھ دیر بعد فیکٹری منہدم ہوگئی۔

فیکٹری میں رکھے کیمیکل ڈرمز وقفے وقفے سے پھٹتے رہے ۔چیف فائر آفیسر کے مطابق فیکٹری کو آگ لگائی گئی ہے۔فیکٹری حکام کے مطابق فیکٹری میں ملازمین اور اکاونٹنٹ کے درمیان تنخواہ کے معاملے پر جھگڑا ہوا جس کے بعد فیکٹری کی بیسمنٹ میں آگ لگی تھی۔

فیکٹری میں آگ لگنے کی اطلاع کے بعد سیکٹر کمانڈر سچل رینجرز بریگیڈیئر نسیم ، ڈی سی ویسٹ آصف جمیل بھی جائے وقوعہ پر پہنچے۔ ترجمان پاک بحریہ کے مطابق فیکٹری میں لگی آگ پر قابو پانے کے لیے پاک بحریہ کے دو فائر ٹینڈر بھی آگ بجھانے میں مصروف ہیں۔

کراچی کی فیکٹری میں لگی آگ شدت اختیار کر گئی،عمارت منہدم ،کروڑوں روپے کانقصان