پاکستان سے جامع سیاسی مذاکرات کے لیے تیار ہیں: اشرف غنی

پاکستان سے جامع سیاسی مذاکرات کے لیے تیار ہیں: اشرف غنی

کابل: افغانستان کے صدر اشرف غنی نے عید کے موقعے پر خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ پاکستان سے جامع سیاسی مذاکرات کے لیے تیار ہیں۔


انھوں نے کابل میں صدارتی محل میں تقریر کرتے کہا کہ پاکستان کے ساتھ امن افغانستان کا قومی ایجنڈا ہے، ایک ایسا امن جس کی بنیاد سیاسی نظریے پر ہو۔انکا کہنا تھاکہ ساری دنیا کو معلوم ہو چکا ہے کہ اس ملک کو زور سے کسی کام کے لیے مجبور نہیں کیا جا سکتا۔ لیکن خطے کی سلامتی کی خاطر ہم منطق اور استدلال کے تحت ہر قدم اٹھانے کو تیار ہیں۔'

حالیہ مہینوں میں پاکستان اور افغانستان کے تعلقات خاصے کشیدہ رہے ہیں۔ اس سال مئی میں صدر غنی نے پاکستان کے دورے کی دعوت یہ کہہ کر مسترد کر دی تھی کہ میں تب تک پاکستان جاﺅں نہیں گا جب تک پاکستان مزار شریف، امریکن یونیورسٹی کابل اور قندھار حملوں کے ذمہ داروں کو افغانستان کے حوالے نہیں کرتا اور پاکستان میں موجود افغان طالبان کے خلاف عملی طور پر قدم نہیں اٹھاتا۔

اس کے علاوہ وہ پاکستان پر متعدد بار الزام لگا چکے ہیں کہ وہ ان طالبان جنگجوﺅوں کو پناہ دیتا ہے جو افغانستان میں حملے کرتے ہیں۔ پاکستان اس الزام کی تردید کرتا ہے۔