نواز شریف کی نااہلی جاری معاشی پالیسیز کے لیے خطرہ ہے ،عالمی ریٹنگ ایجنسی

نواز شریف کی نااہلی جاری معاشی پالیسیز کے لیے خطرہ ہے ،عالمی ریٹنگ ایجنسی

نیویارک:نیویارک سے تعلق رکھنے والی کریڈٹ ریٹنگ ایجنسی ’موڈیز‘ نے پاناما کیس میں نواز شریف کی نااہلی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ معاملہ پاکستان میں جاری معاشی پالیسیز کے لیے خطرہ اور کریڈٹ ریٹنگ پر منفی اثرات مرتب کرسکتا ہے۔


نیویارک سے تعلق رکھنے والی کریڈٹ ریٹنگ ایجنسی ’موڈیز‘ نے پاناما کیس میں نواز شریف کی نااہلی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ یہ معاملہ پاکستان میں جاری معاشی پالیسیز کے لیے خطرہ اور کریڈٹ ریٹنگ پر منفی اثرات مرتب کرسکتا ہے۔

ایجنسی کا کہنا تھا کہ ’اگر مختلف سرکاری اداروں میں سیاسی غیر یقینی اور کشیدگی کی صورت حال برقرار رہی تو یہ انتظامی معیشت اور مالی ایجنڈے، اقتصادی استحکام اور غیر ملکی سرمایہ کاری تک رسائی میں مشکلات کے ساتھ پاکستان کے کریڈٹ پروفائل پر بوجھ بڑھ سکتا ہے‘۔

موڈیزکا کہنا تھا کہ ’مقامی طور پر بڑا سیاسی خطرہ پاکستان کی کریڈٹ پروفائل میں سرایت کررہا ہے‘، ایجنسی نے مزید بتایا کہ سیاسی واقعات ممکنہ طور پر خود مختار کریڈٹ پروفائل پر اثر انداز ہوسکتے ہیں اور یہ واقعات پالیسی بنانے، معیشت اور حکومت کی دولت تک رسائی پر بھی اثر انداز ہوسکتے ہیں۔

موڈیز کا کہنا تھا کہ ’یہ بے دخلی مزید ایک عرصے کے لیے سیاسی عدم استحکام، گھریلو اقتصادی چیلنجوں پر دباؤ  ڈالنے کے لیے پاکستان کی صلاحیت کو کم، سرمایہ کار کے اعتماد میں کمی، سرکاری قرضوں اور ڈونرز سے بیرونی مالی امداد کے حوالے سے توجہ حاصل کرنے میں مسائل کا شکار ہوسکتی ہے‘۔

نواز شریف کی کامیاب پالیسی کے تسلسل کے بارے میں غیر یقینی صورتحال کے حوالے سے بات چیت کرتے ہوئے ریٹنگ ایجنسی کا کہنا تھا کہ نواز شریف کی جانب سے اپنے بھائی شہباز شریف کو نیا وزیراعظم منتخب کرنے سے مستقبل قریب میں کچھ سیاسی تسلسل برقرار رہنے کی امید ہے۔