صوبہ پنجاب میں یکساں نصاب تعلیم کے اطلاق کا مرحلہ وار آغاز ہو گیا

صوبہ پنجاب میں یکساں نصاب تعلیم کے اطلاق کا مرحلہ وار آغاز ہو گیا
سورس: فوٹو: بشکریہ ٹوئٹر

لاہور: صوبہ پنجاب میں تمام نجی و سرکاری سکولوں میں یکساں نصاب تعلیم کے اطلاق کا مرحلہ وار آغاز کر دیا گیا ہے اور ابتدائی طور پر پرائمری تک یکساں نصاب تعلیم رائج کیا گیا ہے۔ 

میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم عمران خان کے ایک قوم ایک کتاب کے ویژن کو عملی جامہ بھی آج کے دن سے پہنایا جا رہا ہے اور پنجاب کے تمام نجی اور سرکاری سکولوں میں یکساں نصاب تعلیم کا اطلاق پہلے مرحلے میں پرائمری سطح سے کیا گیا ہے جسے بتدریج آگے بڑھایا جائے گا۔ 

قبل ازیں وزیر تعلیم پنجاب ڈاکٹر مراد راس کا کہنا تھا کہ دینی مدارس میں بھی پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈ کی کتب ہی پڑھائی جائیں گی، سرکاری اور نجی سکولوں کے اساتذہ کی یکساں نصاب تعلیم کے حوالے سے لرننگ مینجمنٹ سسٹم کے ذریعے تربیت بھی کی جارہی ہے اور تاریخ میں پہلی بار اساتذہ کی آن لائن تربیت کیلئے کسی سسٹم کا قیام عمل میں لایا گیا ہے۔ 

صوبائی وزیر تعلیم نے تعلیمی اداروں کے دوبارہ کھلنے سے متعلق کہا کہ تمام اداروں میں کورونا ایس او پیز پر سختی سے عملدرآمد کرایا جائے گا جبکہ ایک دن میں 50 فیصد طلبہ کو ہی سکولوں میں بلانے کی اجازت ہو گی۔ان کا کہنا تھا کہ سنگل نیشنل کریکولم پورے پاکستان میں نافذ کیا جائے گا جس سے تعلیمی شعبے میں طبقاتی تقسیم کا خاتمہ ہو گا جبکہ صوبہ پنجاب SNC پر عملدرآمد کروانے والا پہلا صوبہ بن گیا ہے۔

واضح رہے کہ صوبہ پنجاب میں تعلیمی اداروں میں گرمیوں کی چھٹیوں کے بعد تمام سکول، کالجز اور یونیورسٹیاں 2 اگست یعنی آج سے کھل گئی ہیں، عالمی وباکے باعث اس بار صوبہ پنجاب میں نئے تعلیمی سال کا آغاز بھی اپریل کی بجائے اگست سے ہو رہا ہے۔