القاعدہ لیڈر ایمن الظواہری امریکی ڈرون حملے میں ہلاک

القاعدہ لیڈر ایمن الظواہری امریکی ڈرون حملے میں ہلاک

کابل: القاعدہ کا لیڈر ایمن الظواہری مبینہ طور پر امریکی خفیہ ایجنسی (سی آئی اے) کے ڈرون حملے میں ہلاک ہو گیا۔ طالبان نے امریکی ڈرون حملے کی مذمت کرتے ہوئے اسے عالمی اصولوں کی خلاف ورزی قرار دیا ہے۔ 

امریکی میڈیا کے مطابق سی آئی اے نے ایمن الظواہری کو اتوار کے روزکابل میں ڈرون حملے سے نشانہ بنایا جبکہ اس کارروائی میں کوئی شہری نہیں ماراگیا۔ایمن الظواہری نے القاعدہ کے بانی لیڈر اسامہ بن لادن کی موت کے بعد تنظیم کی کمان سنبھالی تھی۔

دوسری جانب طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے امریکی ڈرون حملے کی تصدیق کی اور امریکی کارروائی کی مذمت کرتے ہوئے اسے عالمی اصولوں کی خلاف ورزی قرار دیا ہے۔ 

وائٹ ہاؤس کے حکام نے الظواہری کے مارے جانے کی تصدیق کرنے سے انکار کیا لیکن ایک بیان میں کہا کہ افغانستان میں القاعدہ کے ایک اہم ہدف کے خلاف کارروائی کامیاب کارروائی کی اور کوئی شہری جانی نقصان نہیں ہوا۔

واضح رہے کہ اسامہ بن لادن کو سن 2001ءمیں امریکہ پر طیارہ حملوں میں ملوث قرار دیا گیا تھا اور 2011 میں ایب آباد میں امریکی فوج کے آپریشن میں ہلاک کیا گیا تھا۔

امریکہ میں ہونے والے حملوں میں تقریباً3 ہزار افراد مارے گئے تھے اوراب الظواہری کو اس وقت نشانہ بنایا گیا ہے جب ان حملوں سے شہریوں کی موت کی اگلے ماہ برسی منائی جائے گی۔

مصنف کے بارے میں