لیبیا کے ساحل پر پاکستانیوں سمیت 90 افراد ڈوب گئے

لیبیا کے ساحل پر پاکستانیوں سمیت 90 افراد ڈوب گئے

طرابلس : لیبیا کے ساحل کے قریب تارکین وطن کی کشتی ڈوبنے سے 90 افراد ڈوب گئے، جس میں پاکستانیوں کی بھی بڑی تعداد شامل ہے۔


غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق ملازمت کی غرض سے یورپ جانے والے تارکین وطن کی کشتی لیبیا کے ساحل کے قریب بحیرہ روم میں ڈوبنے سے بڑی تعداد میں پاکستانیوں سمیت 90 افراد کی ہلاکت کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔بین الاقوامی تنظیم برائے مہاجرین کی جانب سے جاری بیان میں بتایا گیا ہے کہ 10 افراد کی لاشیں لیبیا کے ساحل سے تحویل میں لی گئیں جن میں 8 پاکستانی اور 2 لیبین باشندے شامل ہیں۔2 افراد نے تیر کر اپنی جان بچائی جب کہ ایک شخص کو مچھلی کا شکار کرنے والی کشتی نے بچایا۔

قبل ازیں مشرقی لیبیا کے علاقے زراوا کے سیکیورٹی حکام نے بتایا کہ انہوں نے بھی 2 لیبین اور ایک پاکستانی شہری کو بچایا ہے۔کشتی حادثے میں بچ جانے والے افراد نے رضا کاروں کو بتایا کہ ڈوبنے والی کشتی میں زیادہ تر پاکستانی سوار تھے جو شمالی افریقا کے ذریعے اٹلی جا رہے تھے۔

خیال رہے کہ بحیرہ روم کے ذریعے مختلف ممالک سے تارکین وطن کی بڑی تعداد نوکریوں کی غرض سے ترکی، یونان اور یورپی ممالک کا سفر کرتی ہے اور اس کوشش کے دوران اکثر و بیشتر کشتی ڈوبنے کے واقعات بھی پیش آتے ہیں جن میں متعدد افراد اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھتے ہیں۔