ولی عہد شیخ محمدکا دورہ پاکستان، اقتصادی تعلقات بڑھانے پر اتفاق

ولی عہد شیخ محمدکا دورہ پاکستان، اقتصادی تعلقات بڑھانے پر اتفاق
Image Source: File Photo

اسلام آباد:ابوظہبی کے ولی عہد شیخ محمد بن زاید النہیان ایک روزہ دورے کے بعد وطن واپس روانہ ہو گئے۔ وزیراعظم عمران خان اور ولی عہد کے درمیان ملاقات میں مقبوضہ کشمیر کی صورتحال اور باہمی معاشی تعلقات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔


اعلامیے کے مطابق ,وزیراعظم عمران خان نے ولی عہد شیخ محمد بن زاید النہیان کو مقبوضہ کشمیر میں طویل لاک ڈاؤن اور بھارت میں مسلمانوں کے خلاف شہریت کے امتیازی قانون سے آگاہ کیا۔ ولی عہد شیخ محمد نے او آئی سی کی یکجہتی کیلئے پاکستانی کوششوں‌ کی تعریف  کی.

وزیراعظم نے کہا کہ عالمی برادری مسئلہ کشمیر کے پرامن حل اور مقبوضہ کشمیر کا محاصرہ ختم کرانے میں اپنا کردار ادا کرے۔ ملاقات میں مسلم امہ کے مسائل کے حل کے لیے او آئی سی کے کردار پر بھی بات چیت کی گئی جبکہ دونوں رہنماؤں نے افغان امن عمل پر بھی تبادلہ خیال کیا۔

معاشی صورتحال پر وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان متحدہ عرب امارات کی مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری میں دلچسپی کا خیر مقدم کرتا ہے۔ متحدہ عرب امارات کی سرمایہ کاری کے لئے بھرپور سہولیات فراہم کی جائیں گی۔

ملاقات میں چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروبار میں قریبی تعاون پر بھی اتفاق کیا گیا۔ ولی عہد نے پاکستان اور یو اے ای تعلقات کی سٹریٹجک اہمیت پر زور دیتے ہوئے پاکستان کی تیز رفتار ترقی کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔

اس سے قبل پاکستان پہنچنے پر وزیراعظم نے ابوظہبی کے ولی عہد کا نور خان ایئر بیس پر پُرتپاک استقبال کیا اور معزز مہمان کی گاڑی خود ڈرائیو کی۔

ملاقات کے بعد وزیراعظم عمران خان نے ولی عہد شیخ محمد بن زاید النہیان کے اعزاز میں ظہرانہ دیا جس کے بعد وہ واپس وطن روانہ ہو گئے۔

ادھر پاکستان میں قائم اماراتی سفارتخانے کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ یو اے ای کے صدر شیخ خلیفہ بن زید النہیان کی ہدایت پر پاکستان میں 40 منصوبوں پر کام شروع کر دیا گیا ہے۔ پاکستان میں شروع کیے گئے منصوبوں کی لاگت 73 کروڑ درہم ہے۔ ان منصوبوں کی رقم ابوظہبی ڈویلپمنٹ فنڈ سے جاری کی جا رہی ہیں۔