طاہر محمود اشرفی کی سانحہ سیالکوٹ کا ٹرائل جلد از جلد مکمل کرنے کی اپیل

طاہر محمود اشرفی کی سانحہ سیالکوٹ کا ٹرائل جلد از جلد مکمل کرنے کی اپیل
سورس: فوٹو: بشکریہ ٹوئٹر

لاہور: وزیراعظم پاکستان عمران خان کے نمائندہ خصوصی برائے مذہبی ہم آہنگی حافظ طاہر محمود اشرفی نے عدالت سے سانحہ سیالکوٹ کا ٹرائل جلد از جلد مکمل کرنے کی اپیل کی ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق بین المذاہب ہم آہنگی سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ سیالکوٹ واقعہ اسلامی روایات کے منافی تھا کیونکہ اسلام مکمل امن اور آشتی کا دین ہے جبکہ آئین پاکستان ایسے لوگوں کو بھی حقوق دیتا ہے، جو اسے نہیں مانتے۔ 

وزیراعظم کے نمائندہ خصوصی نے کہا کہ سانحہ سیالکوٹ کے ملزمان نے اپنی جہالت سے اپنے گھروں کو بھی مشکل میں ڈال دیا ہے۔ انہوں نے چیف جسٹس آف پاکستان سے سیالکوٹ سانحے کا سپیڈی ٹرائل کرنے کی درخواست بھی کی۔ 

ان کا کہنا تھا کہ دین اسلام میں جبری شادی کی کوئی گنجائش نہیں ہے اور اس حوالے سے عوام میں رواداری کا شعور پیدا کرنے کیلئے آگاہی مہم شروع کر رہے ہیں جبکہ ہم جبری طور پر مذہب کی تبدیلی کے خلاف ہیں اور تبدیلی مذہب کیلئے پوری تحقیقات کی جاتی ہیں۔ 

حافظ طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ انسانی حقوق کے پنجاب آفس میں شکایات کی وصولی کا انتظام کیا جائے اور دنیا کو یہ پیغام دیں گے کہ پاکستان میں انسانی حقوق کا تحفظ کیا جاتا ہے اور اقلیتوں کو بھی ان کے حقوق دئیے جاتے ہیں۔