خرگوش کے وائرس سے بلڈ کینسر کے علاج میں پیش رفت

مطالعاتی ٹیم کے سربراہ ڈاکٹر ایرک باڑٹی کہتے ہیں: ’اس تحقیق کا سب سے دلچسپ پہلو یہ ہے کہ ایم وائی ایکس وی سے ایم ایم کا علاج کرتے ہوئے اس وائرس کی بجائے خود مریض چوہے کے جسم نے ردِعمل ظاہر کیا۔‘ اس سے ظاہر ہوا کہ یہ وائرس چوہوں کے قدرتی دفاعی نظام کو مضبوط بناتا ہے اور کینسر کو ختم کرتا ہے۔

خرگوش کے وائرس سے بلڈ کینسر کے علاج میں پیش رفت

ساؤتھ کیرولینا: خون کے کینسر کی عام قسم ملٹی پل مائیلوما (ایم ایم) کے علاج کی ایک اُمید ایک بھولے بھالے جانور خرگوش سے پیدا ہوئی ہے۔ خاص طور پر صرف اسی جانور میں پائے جانے والے ایک وائرس مائکسوما (ایم وائی ایکس ڈبلیو) سے بلڈ کینسر کے علاج کی راہ ہموار ہوئی ہے۔


ملٹی پل مائیلوما کو ہڈیوں کے گودے کا کینسر بھی کہا جاتا ہے جس کا علاج بہت مشکل ہوتا ہے۔ لیکن خرگوشوں میں پایا جانے والا ایک وائرس مائکسوما مختلف جانوروں میں قدرتی دفاعی نظام (امنیاتی نظام) کو مضبوط کرتا ہے۔ اس سے ان میں سرطانی رسولیوں کو تباہ کرنے کی قوت پیدا ہوتی ہے۔

ملٹی پل مائیلوما خون کے سرطان کی دوسری مشکل ترین قسم ہے جو نہ صرف مہلک ہے بلکہ بار بار حملہ آور ہوتا ہے۔ یہاں تک کہ جدید ترین اسٹیم سیل طریقہ علاج سے بھی تمام کینسر زدہ خلیات ختم نہیں ہوپاتے۔

مطالعاتی ٹیم کے سربراہ ڈاکٹر ایرک باڑٹی کہتے ہیں: ’اس تحقیق کا سب سے دلچسپ پہلو یہ ہے کہ ایم وائی ایکس وی سے ایم ایم کا علاج کرتے ہوئے اس وائرس کی بجائے خود مریض چوہے کے جسم نے ردِعمل ظاہر کیا۔‘ اس سے ظاہر ہوا کہ یہ وائرس چوہوں کے قدرتی دفاعی نظام کو مضبوط بناتا ہے اور کینسر کو ختم کرتا ہے۔