سعودی عرب میں فیملی ٹیکسی کے حوالے سے بڑی خبر آگئی

سعودی عرب میں فیملی ٹیکسی کے حوالے سے بڑی خبر آگئی
فیملی ٹرانسپورٹ نظام کی خلاف ورزپر 5000 ریال جرمانہ ،فائل فو ٹو

جدہ : سعودی عرب میں ٹریفک کے شعبے میں اہم اصلاحات کی جارہی ہیں ، جہاں محکمہ ٹرانسپورٹ میں سعودائزیشن کو فروغ دیا جا رہاہے۔ اسکے ساتھ  محکمہ ٹرانسپورٹ میں نئی تبدیلیاں بھی کی جارہی ہیں ،سعودی حکومت نے فیملی ٹیکسی کو منظم کرنے والا لائحہ عمل جاری کردیا گیا۔


یہ بھی پڑھیں :- وہاب ریاض کا ڈربی شائر کلب کیساتھ ٹی ٹوئنٹی بلاسٹ ٹورنامنٹ کیلئے معاہدہ طے

نئے قانون کے مطابق  اگر فیملی ٹیکسی میں کوئی ایک خاتون بھی نہیں ہوگی تو اسے فیملی ٹرانسپورٹ نظام کی خلاف ورزی مانا جائیگا۔ اس پر 5ہزار ریال جرمانہ ہوگا۔ فیملی ٹیکسی میں کم از کم ایک خاتون کا ہونا ضروری ہے۔ اگر فیملی ٹیکسی کوئی غیر ملکی چلا رہا ہوگا تو ایسی صورت میں ڈرائیور پر بھی 5ہزار ریال کا جرمانہ ہوگا۔ فیملی ٹیکسی لائحہ عمل نے متعدد خلاف ورزیوں اور ان پر سزاﺅں کی نشاندہی کردی ہے۔

یہ بھی پڑھیں :- نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ نے پاکستان کا دورہ کرنے پر غور شروع کر دیا

اسکے تحت اگر کسی ایک شہر کے اندر فیملی ٹیکسی اجازت نامہ رکھنے والے ڈرائیور نے وہ گاڑی کسی اور شہر میں چلائی تو ایسی صورت میں اس پر 5ہزارریال جرمانہ کیا جائیگا جبکہ مقررہ سرگرمی سے مختلف غرض کیلئے فیملی ٹیکسی چلانے کا جرمانہ 3ہزار ریال ہوگا۔ ٹیکسی میں بچوں یا مردوں کے ہوتے ہوئے فیملی ٹیکسی کے ذریعے ٹرانسپورٹ کی کوئی اور خدمت فراہم کرنے پر 2ہزار ریال جرمانہ مقرر کیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں :- حرم مکہ میں طواف اور سعی کے لیے میٹرو اور متحرک مطعاف کی تجویز سامنے آگئی