پی ٹی آئی اور متحدہ نے انتخابی ترمیمی بل 2017 چیلنج کر دیا

پی ٹی آئی اور متحدہ نے انتخابی ترمیمی بل 2017 چیلنج کر دیا

کراچی: ایم کیو ایم پاکستان اور تحریک انصاف نے انتخابی اصلاحات کا ترمیمی بل عدالت میں چیلنج کر دیا۔ گزشتہ دنوں سینیٹ نے انتخابی اصلاحات کا بل پیپلز پارٹی کی ترمیم کو مسترد کرتے ہوئے منظور کیا تھا جس کے بعد نواز شریف کے پارٹی صدر بننے کی راہ ہموار ہو گئی ہے جب کہ بل کے لیے ایک ووٹ سے ترمیم منظور ہوئی اور وہ ووٹ ایم کیو ایم کے رکن میاں عتیق نے دیا۔


سندھ ہائیکورٹ میں ایم کیو ایم کے سینیٹرز، پی ٹی آئی رہنما علی زیدی اور فکس اٹ کے عالمگیر نے درخواست دائر کی ہے جس میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ انتخابی ایکٹ 2017 ترمیمی بل آئین کے منافی ہے۔

یاد رہے کہ بل میں پیپلز پارٹی کے اعتزاز احسن نے ترمیم پیش کی تھی کہ جو ایم این اے نہیں بن سکتا وہ پارٹی کا سربراہ نہیں بن سکتا تاہم ان کی ترمیم ایک ووٹ کے فرق سے مسترد ہوئی تھی۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں