بھارت میں بھارتیہ جنتا پارٹی کی نہیں دہشت گرد تنظیم آر ایس ایس کی حکومت ہے: خواجہ آصف

بھارت میں بھارتیہ جنتا پارٹی کی نہیں دہشت گرد تنظیم آر ایس ایس کی حکومت ہے: خواجہ آصف

اسلام آباد: وزیر خارجہ خواجہ آصف نے کہا ہے کہ بھارتی وزیر اعظم دہشت گرد ہے جس کے ہاتھ مسلمانوں کے خون سے رنگے ہوئے ہیں .میرے دورے پر سول ، ملٹری قیادت ایک پیج پر ہیں .دنیا میں کہیں بھی دو لاکھ فوج دہشت گردی کے خلاف نہیں لڑ رہی. دہشت گردی کے خلاف جتنی کامیابی ہم نے حاصل کی اتنی کسی اور نے نہیں کی.ہم نے اداروں کے ساتھ کبھی محاذ آرائی نہیں کی اور ہمیشہ عدالتی فیصلہ قبول کیا ہے .صادق و امین کی پابندی سب پر ہونی چاہئے صرف سیاست دانوں پر نہیں.


ایک نجی ٹی وی کے پروگرام میں اظہار خیال کر تے ہو ئے وزیر خارجہ خواجہ آصف نے کہا کہ بھارت میں بھارتیہ جنتا پارٹی کی نہیں بلکہ دہشت گرد تنظیم آر ایس ایس کی حکومت ہے اور بی جے پی اس کی ذیلی جماعت ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی دہشت گرد ہے جس کے ہاتھ مسلمانوں کے خون سے رنگے ہوئے ہیں۔ان کا کہنا ہے کہ امریکا کے ساتھ ہمارے معاملات الجھے ہوئے ہیں لیکن امریکا کے ساتھ ہم اپنی پوزیشن واضح کرنا چاہتے ہیں، میرے دورے پر سول اور ملٹری قیادت ایک پیج پر ہیں۔انہوں نے کہا کہ دنیا میں کہیں بھی دو لاکھ فوج دہشت گردی کے خلاف نہیں لڑ رہی اور دہشت گردی کے خلاف جتنی کامیابی ہم نے حاصل کی اتنی کسی اور نے نہیں کی کیوں کہ فوجی آپریشن پچھلے 4 سال میں مکمل کامیاب ہوئے ہیں۔

خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ میرے دونوں بیانات ایک ہی بیان کا تسلسل ہیں اور نیشنل ایکشن پلان اپنا گھر صاف کرنے کے لیے بنایا گیا تھا جس کے تحت ہمیں اپنا گھر درست کرنا تھا۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ہم نے اداروں کے ساتھ کبھی محاذ آرائی نہیں کی اور ہمیشہ عدالتی فیصلہ قبول کیا ہے لیکن صادق و امین کی پابندی سب پر ہونی چاہئے صرف سیاست دانوں پر نہیں۔وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ میرا حق بنتا ہے کہ میں اپنا صدر کسی کو بھی چنوں لہذا نواز شریف میرے قائد ہیں اور میرا حق ہے کہ میں انہیں صدر بنا ؤں۔