بلوچستان عوامی پارٹی نے جام کمال کو وزیراعلیٰ بلوچستان اور عبدالقدوس بزنجو کو اسپیکر نامزد کر دیا

10:45 PM, 3 Aug, 2018

کوئٹہ: بلوچستان عوامی پارٹی نے جام کمال کو وزیراعلیٰ بلوچستان اور عبدالقدوس بزنجو کو صوبائی اسمبلی کے اسپیکر کے لیے نامزد کر دیا۔

کوئٹہ میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے بلوچستان عوامی پارٹی کے جنرل سیکریٹری منظور کاکڑ کا کہنا تھا کہ بی اے پی نے جام کمال خان کو وزیراعلیٰ بلوچستان اور میر عبدالقدوس بزنجو کو اسپیکر بلوچستان اسمبلی کے لیے نامزد کر دیا ہے۔منظور کاکڑ کا کہنا تھا کہ ہم نے بلوچستان کے عوام کے لیے فیصلے کیے ہیں اور پارٹی کے تمام فیصلے جمہوری انداز سے ہوئے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ جان محمد جمالی بھی اسپیکر بلوچستان اسمبلی کے امیدوار تھے تاہم انہوں نے اپنا نام واپس لے لیا ہے۔سیکریٹری جنرل بی اے پی نے کہا کہ ڈپٹی اسپیکر بلوچستان اسمبلی کے لیے دیگر جماعتوں سے مشاورت کریں گے۔

یہ بھی پڑھیں:پی ٹی آئی کے این اے 254 سے کامیاب امیدوار کے اشتہاری ہونے کا انکشاف

   

وزیراعلیٰ بلوچستان کے لیے نامزد امیدوار جام کمال کا اس موقع پر کہنا تھا کہ ہم صوبے میں اکثریت حاصل کر چکے ہیں لیکن اکثریت کے باوجود دیگر جماعتوں کو ساتھ لے کر چلنا چاہتے ہیں۔جام کمال نے کہا بلوچستان نیشنل پارٹی اور اور جے یو آئی ف کو بھی حکومت میں شامل ہونے کی دعوت دی ہے۔نامزد وزیراعلیٰ بلوچستان نے کہا کہ وفاق سے صوبے کا جائز حق ضرور لیں گے اور جو لوگ ملک کے آئین کو تسلیم کریں گے ان سے بات چیت ہو گی۔

یہ بھی پڑھیں:قومی اسمبلی میں پاکستان تحریک انصاف کی ایک اور نشست بڑھ گئی

   

خیال رہے کہ 25 جولائی کو ہونے والے عام انتخابات میں بلوچستان عوامی پارٹی سب سے زیادہ 15 نشستیں حاصل کر کے بلوچستان کی سب سے بڑی جماعت بن کر سامنے آئی جب کہ متحدہ مجسل عمل 9 امیدواروں کے ساتھ دوسرے اور بی این پی 6 اراکین کے ساتھ صوبے میں تیسرے نمبر پر ہے جبکہ پاکستان تحریک انصاف نے بھی بلوچستان اسمبلی کی 4 نشستیں جیتی ہیں اور پی ٹی آئی نے صوبے میں بلوچستان عوامی پارٹی کی حمایت کا اعلان کیا ہے۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں

 

مزیدخبریں