چین کا دورہ سیاسی و معاشی لحاظ سے اہم، دوست ملک سے مدد طلب کریں گے: وفاقی وزیر خزانہ

چین کا دورہ سیاسی و معاشی لحاظ سے اہم، دوست ملک سے مدد طلب کریں گے: وفاقی وزیر خزانہ
سورس: فوٹو: بشکریہ ٹوئٹر

اسلام آباد: وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین نے کہا ہے کہ ہم چین سے مدد طلب کرنے کیلئے جارہے ہیں اور یہ دورہ سیاسی و معاشی لحاظ سے انتہائی اہم ہے، چین سے کہیں گے کہ اپنی صنعتیں پاکستان میں بھی لائیں۔ 

تفصیلات کے مطابق چین روانگی سے قبل اپنے ایک بیان میں وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین نے کہا کہ انٹرنیشنل مانیٹرنگ فنڈ (آئی ایم ایف) کی جانب سے پاکستان کیلئے قرض کی چھٹی قسط کی منظوری ملکی معیشت کیلئے خوش آئند ہے۔ 

ان کا کہنا تھا کہ قسط کی منظوری کا مطلب ہے کہ عالمی مالیاتی ادارہ (آئی ایم ایف) پاکستان کی اقتصادی حکمت عملی سے متفق ہے، قرض کی چھٹی قسط منظور ہونے سے نا صرف ملکی معیشت بہتر ہو گی بلکہ کرنسی میں بھی استحکام آئے گا۔ 

شوکت ترین نے کہا کہ اب ہم چین کے دورے پر جا رہے ہیں اور یہ دورہ ہمارے کیلئے سیاسی و معاشی لحاظ سے انتہائی اہم ہے، ہم چین سے مدد طلب کرنے جا رہے ہیں، دوست ملک سے کہیں گے کہ آپ اپنی صنعتیں بیرون ملک لے جارہے ہیں اپنی انڈسٹری پاکستان میں بھی لائیں۔ 

وفاقی وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ پاکستان میں سپیشل اکنامک زون اب تیار ہیں، اگر چین سپیشل اکنامک زونز میں پنی انڈسٹری منتقل کرتا ہے تو یہ دونوں کیلئے بہترین ثابت ہو گا، وزیر اعظم عمران خان چین سے ایگریکلچر ٹرانسفارمیشن پلان میں بھی چین سے مدد فراہم کرنے کا کہیں گے۔ 

مصنف کے بارے میں