جاپانی شہری نے بیوی سے بولے بغیر بیس سال گزار دیئے

جاپانی شہری نے بیوی سے بولے بغیر بیس سال گزار دیئے

ٹوکیو : جاپانی شہری نے بیوی سے بات چیت کیے بنا بیس سال گزار دیئے ۔ ناراضی کی وجہ سے اشاروں کی زبان استعمال کرتا رہا ۔


بیس سال بعد بچوں کے مجبورکرنے پر خاموشی توڑی ۔ اسے انا کہیں یا بے جا ضد ، لیکن یہ حقیقت ہے کہ جاپانی شہری اوٹو نے اپنی اہلیہ کاتایاما یومی کے ساتھ بیس سال بغیر بات چیت کے گزار دیئے ۔

بیس سال قبل بیوی کی جانب سے نظر انداز کیے جانے پر اوٹو ایسا ناراض ہوا کہ پھر لاکھ منانے پر بھی نہ مانا ۔

اٹھارہ سالہ بیٹے نے یہ معاملہ ایک ٹی وی چینل پر اٹھایا کہ اس نے کبھی بھی اپنے والدین کو گفتگو کرتے نہیں سنا ۔

بچوں کے مجبور کرنے پر جاپانی شہری نے اپنی بیوی سے پہلی بار گفتگو کی ۔ والدین کی 20 سال بعد پہلی گفتگو سن کر بچے اپنے جذبات پر قابو نہ رکھ پائے ۔