فینسی ، نمونہ اور بغیر نمبر پلیٹس موٹرسائیکلیں بند،مالکان کیخلاف مقدمات درج کرنیکا فیصلہ

فینسی ، نمونہ اور بغیر نمبر پلیٹس موٹرسائیکلیں بند،مالکان کیخلاف مقدمات درج کرنیکا فیصلہ
تصویر بشکریہ فیس بک

لاہور: ٹریفک پولیس لاہور نے فینسی ، نمونہ اور بغیر نمبر پلیٹس موٹرسائیکلوں اور گاڑیوں کے خلاف سخت کارروائی کا فیصلہ کر لیا ہے۔


تفصیلات کے مطابق غیر قانونی نمبر پلیٹس والی گاڑیوں کے خلاف صوبہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں کریک ڈائون کرنے کا انتباہ جاری کیا گیا۔ جس کے تحت جعلی اور بوگس نمبر پلیٹس پر ای چالان نہیں بھجوایا جائے گا بلکہ موٹرسائیکل یا گاڑی مالکان کے خلاف مقدمات درج کروائے جائیں گے۔

سٹی ٹریفک پولیس افسر لیاقت علی ملک کا کہنا ہے کہ فینسی، غیر نمونہ اور بغیر نمبر پلیٹس گاڑیوں، موٹر سائیکلوں کے خلاف شکنجہ تیار کرلیا ہے، 15 جنوری سے ایسی وہیکلز کے خلاف سخت کارروائی ہوگی۔ لیاقت علی ملک کا کہنا تھا کہ کارروائی سے پہلے شہریوں کو بھرپور آگاہی فراہم کی جائے گی، شہریوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ پریشانی سے بچنے کے لیے شہری محکمہ ایکسائز سے جاری شدہ نمبر پلیٹس ہی استعمال کریں۔

انہوں نے کہا کہ جعلی ، نمونہ اور فینسی نمبر پلیٹس لگانے والوں کے خلاف مقدمات بھی درج کیے جائیں گے۔ سٹی ٹریفک پولیس افسر کا کہنا تھا کہ جن گاڑیوں کا چالان ہوگا انہیں چالان پر کاغذات کی واپسی اصل نمبر پلیٹ دکھانے پر کی جائے گی۔ لیاقت علی ملک نے مزید کہا کہ 15 جنوری سے شہر کے داخلی اور خارجی راستوں پر ناکے لگائے جائیں گے جہاں نمبر پلیٹس کے حوالے سے جاری ہدایات کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف کارروائی ہو گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ سکولوں و کالجوں اور بس اسٹیںڈز کے باہر شہریوں کی آگاہی کے لیے لیکچرز بھی دئے جائیں گے۔ خیال رہے کہ محکمہ ایکسائر نے جعلی اور فینسی نمبر پلیٹیں بنانے والوں کے خلاف کافی عرصہ سے ہی کارروائی کا آغاز کر رکھا ہے۔ ٹریفک پولیس نے 14 اپریل 2017ءکو تاریخ کا پہلا مقدمہ درج کر کے دو افراد کو گرفتار کیا تھا، محکمہ ایکسائز نے جعلی نمبر پلیٹس بنانے والی فیکٹری کو سیل کر کے دس ہزار نمبر پلیٹیں بھی قبضے میں لی تھیں۔