شمالی کوریا کےپاس 7 ٹریلین ڈالر کی معدنی دولت ہے

شمالی کوریا کےپاس 7 ٹریلین ڈالر کی معدنی دولت ہے

پیانگ یانگ:شمالی کوریا عالمی پابندیوں کے باعث شدید مالی و معاشی بحران کا شکار ہے اور بعض رپورٹس کے مطابق اس کے شہری گھاس تک کھانے پر مجبور ہو چکے ہیں لیکن اب ایک رپورٹ انکشاف کیا گیا ہے کہ شمالی کوریا کی زمین میں اس قدر قیمتی معدنیات موجود ہیں کہ اگر حکومت انہیں نکالنے کا کام شروع کر دے تو شمالی کوریا دنیا کا امیر ترین ملک بن سکتا ہے۔ Quartz کی رپورٹ کے مطابق شمالی کوریا کی زمین میں چھپے معدنی خزانوں کی مالیت ایک اندازے کے مطابق 7ٹریلین ڈالر سے زائد ہے۔ یہ اتنی رقم ہے کہ دنیا کی کل 7ارب آبادی کو فی کس 1ہزار ڈالر(تقریباً1لاکھ روپے) دیئے جائیں تو بھی رقم بچ رہے گی۔


رپورٹ کے مطابق شمالی کوریا کی سرزمین میں چھپی معدنیات میں زنک، تانبا، لوہا، سونا، میگنیسائیٹ، کیلشیم کاربونیٹ اور مولبڈینم و دیگر شامل ہیں لیکن شدید مالی و معاشی بدحالی کے باعث شمالی کوریا ان معدنیات کو نکالنے کی استطاعت نہیں رکھتا۔ اس کے پاس مناسب سازوسامان اور مشینری نہیں ہے جو معدنیات نکالنے کے لیے ضروری ہے۔ عالمی پابندیوں کے باعث غیرملکی کمپنیاں بھی ان معدنیات کو نکالنے کے لیے وہاں سرمایہ کاری نہیں کر سکتیں۔واضح رہے کہ مارچ 2016ء میں شمالی کوریا پر سونا، لوہا و دیگر معدنیات برآمد کرنے پر پابندی عائد کر دی گئی تھی جو تاحال لاگو ہے۔