جمشید دستی کیخلاف اشتعال انگیز تقریر کے مقدمے میں فیصلہ محفوظ

جمشید دستی کیخلاف اشتعال انگیز تقریر کے مقدمے میں فیصلہ محفوظ

سرگودھا: اشتعال انگیز تقریر کیس میں  ایم این اے جمشید دستی کی درخواست ضمانت پر فیصلہ محفوظ کر لیا گیا ہے جس کو آج سنائے جانے کا امکان ہے۔ جمشید دستی کے خلاف حکومتی اجازت کے بغیر نہر کھولنے کا مقدمہ بھی تھا جس میں انہیں حراست میں لیا گیا تھا۔


کیس کی سماعت کے دوران اے ٹی سی سرگودھا میں ملزم کی والدہ اور بہن کو عدالت میں داخل ہونے سے روک دیا گیا جس پر دونوں نے شدید احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ انہیں زبردستی عدالت میں داخل ہونے سے روکا گیا۔ ان کا کہنا تھا کہ انصاف کے تمام پورے کئے جائیں۔

یاد رہے جمشید دستی کو 2013 میں بی اے کی جعلی ڈگری پیش کرنے کے الزام میں پانچ ہزار جرمانہ اور تین سال قید کی سزا سنائی گئی تھی ۔ 2015 میں انہیں قتل کے الزام میں حراست میں بھی لیا گیا تھا۔

 

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں