کراچی پورٹ ٹرسٹ کے سابق چیئرمین جاوید حنیف گرفتار

کراچی پورٹ ٹرسٹ کے سابق چیئرمین جاوید حنیف گرفتار
ملزم کو کراچی میں ان کی رہائش گاہ سے گرفتار کیا گیا۔۔۔۔فائل فوٹو

اسلام آباد: قومی احتساب بیورو (نیب) نے کراچی پورٹ ٹرسٹ کے سابق چیئرمین جاوید حنیف کو گرفتار کر لیا۔ نیب کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق جاوید حنیف پر اختیارات کے غلط استعمال، محکمے میں غیر قانونی بھرتیاں کرنے اور ادارے کو 2 ارب 80 کروڑ روپے نقصان پہنچانے کا الزام ہے۔


نیب کے مطابق ملزم کو کراچی میں ان کی رہائش گاہ سے گرفتار کیا گیا اور وہ کے پی ٹی افسران کے خلاف تفتیش میں مطلوب تھے۔

مزید پڑھیں: لاہور میں طوفانی بارش، شہر ڈوب گیا، کرنٹ لگنے سے 5 افراد جاں بحق

نیب کے اعلامیے میں مزید کہا گیا ہے کہ جاوید حنیف پر اختیارات کے غلط استعال سے 940 ملازمین کی بھرتی کا الزام ہے اور یہ بھرتیاں انہوں نے اس وقت کے وزیر بابر غوری کی معاونت سے کیں۔

نیب اعلامیے میں انکشاف کیا گیا ہے کہ محکمے میں بھرتی ہونے والوں کی بڑی تعداد دہشت گردی جیسے سنگین جرائم کے ریکارڈ کی حامل تھی جب کہ غیرقانونی تقرریوں سے قومی خزانے کو 2 ارب 80 کروڑ روپے کا نقصان ہوا۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں