سوشل میڈیا پر کسی بھی فرد کو بدنام کرنے کی سزامقرر ہے ، پبلک پراسیکیوشن

ریاض:سعودی عرب کے  پبلک پراسیکیوشن ڈپارٹمنٹ نے ملکی اور غیر ملکی شہریوں کو  خبردار کیاہے کہ کسی بھی شخص کو بدنام کرنا اور سوشل میڈیا سمیت کسی بھی ذریعے سے اسے کسی پروگرام ، کسی ویڈیو کلپ او رکسی تبصرے کے ذریعے نقصان پہنچانے پر سزا مقرر ہے۔

پبلک پراسکیوشن کے مطابق یہ ایک  اطلاعاتی جرم شمار کیا جاتا ہےاور اس پر 5برس قید اور 30لاکھ ریال جرمانہ مقرر ہے۔ پبلک پراسیکیوشن نے توجہ دلائی کہ ملکی نظام کو نقصان پہنچانا یا انٹرنیٹ کے ذریعے کسی بھی انسان کی نجی زندگی کے تقدس کو پامال کرنا قابل سزا جرم ہے۔

یہ بھی پڑھیں :- سعودی پبلک پراسکیوشن کا تمام دفاتر میں خواتین انسپکٹرز تعینات کرنے کا حکم

اس پر قید اور جرمانہ ہوگا۔ پبلک پراسیکیوشن کا کہناہے کہ بعض لوگ ملکی نظام یا مذہبی اقدار یا سماجی آداب یا نجی زندگی کے تقدس کو پامال کرنے میں ادنی ہچکچاہٹ محسوس نہیں کرتے اور وہ انٹرنیٹ کے ذریعے افواہیں پھیلا کر اس قسم کی حرکتیں کررہے ہیں جس پر وہ قید اورجرمانے کے سزا وار ہونگے۔