ہمارا مطالبہ صرف الیکشن، لانگ مارچ خونی ہو سکتا ہے: شیخ رشید

ہمارا مطالبہ صرف الیکشن، لانگ مارچ خونی ہو سکتا ہے: شیخ رشید

لاہور: سابق وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید نے کہا ہے کہ ملک میں سازش ہو رہی ہے اور اگلے 30 روز بہت اہم ہیں جبکہ لانگ مارچ خونی ہو سکتا ہے، ہمارا مطالبہ صرف الیکشن ہے، معاملے کا حل 31 مئی تک نکال لیں، الیکشن کی تاریخ دیں، عمران خان کو منانا ہمارا کام ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شیخ رشید کا کہنا تھا کہ ملکی حالات خوفناک صورتحال کی جانب جا رہا ہے، یہ حالات کو کہیں اور لے جانا چاہتے ہیں اور میری دعا ہے کہ ملک میں امن رہے کہیں جھاڑو نہ پھر جائے، حالات خراب ہیں، 31 مئی تک معاملے کا حل نکالیں، ممکن ہے مارچ کا اعلان ہو اور حالات عمران خان کے ہاتھ سے نکل جائیں۔ 

انہوں نے کہا کہ بھٹو کے دور میں لوگوں نے اسلام آباد میں خود کو آگ لگائی، لانگ مارچ میں کچھ لوگ خود کو آگ لگانا چاہتے ہیں ،میں حالات کو ٹھنڈا رکھنا چاہتا ہوں، منشیات فروش جس ملک میں وزیر داخلہ ہو گا تو کیا وہاں امن ہو گا؟ گلی، محلوں میں لڑائی ہونے لگی ہے جس کا ذمہ دار رانا ثنا اللہ ہے۔ ہمارے خلاف رانا ثنا اللہ نے مختلف شہروں میں مقدمات بنوائے، وہ بتائیں متعدد شہروں میں سے کس شہر میں گرفتاری دوں؟

انہوں نے کہا کہ میرا بھتیجا لاپتہ ہے، 20,20 کروڑ کے لوگ بکے ہیں یہ مسجد میں نماز نہیں پڑھ سکتے، ان لوگوں نے تو اپنے علاقوں میں نماز بھی نہیں پڑھی۔ میں نواز شریف کی شکل بھی دیکھنا پسند نہیں کرتا، مداخلت قوموں اور ملکوں کے درمیان ہوتی ہے، جوتے پالش کرنے والے کے ساتھ قوم رہنے کو تیار نہیں۔ 

شیخ رشید نے کہا کہ لانگ مارچ میں عمران خان کے ساتھ ہوں، لانگ مارچ سب کا مشترکہ فیصلہ ہے، جیل ہماری سسرال، موت ہماری محبوبہ اور ہتھکڑی ہمارا زیور ہے، ہمارا مطالبہ صرف الیکشن ہے، الیکشن کی تاریخ پر آئیں اور کوئی مطالبہ نہیں، 960 دن کی تاریخ دیں، بڑی عید کے بعد الیکشن کرا لیں، آپ الیکشن کی تاریخ دیں، عمران خان کو منانا ہمارا کام ہے۔ 

ان کا کہنا تھا کہ غیر ملکی سازش کے تحت پاکستان کی فوج کے خلاف مہم چلائی جارہی ہے، میں پاک فوج کے ساتھ ہوں، فوج کو عظیم سمجھتا ہوں۔ انہوں نے مزید کہا کہ سابق وزیراعظم عمران خان کے ساتھ ہوں، نازیبا ویڈیوز جتنی مرضی جاری کردیں، قوم عمران خان کے ساتھ ہے۔

مصنف کے بارے میں