جنوبی کوریا کے وزیراعظم برطرف، صدر نے وزیر خزانہ کو بھی ہٹا دیا

گزشتہ روز ہی صدر نے وزیراعظم کے ساتھ ساتھ وزیر خزانہ یو ال ہو کو بھی ہٹا کر فنانس سروس کمیشن کے چیئرمین یم جونگ یونگ کو نیا وزیر خزانہ اور نائب وزیراعظم کا عہدہ دے دیا گیا۔

جنوبی کوریا کے وزیراعظم برطرف، صدر نے وزیر خزانہ کو بھی ہٹا دیا

گزشتہ روز ہی صدر نے وزیراعظم کے ساتھ ساتھ وزیر خزانہ یو ال ہو کو بھی ہٹا کر فنانس سروس کمیشن کے چیئرمین یم جونگ یونگ کو نیا وزیر خزانہ اور نائب وزیراعظم کا عہدہ دے دیا گیا۔ ان برطرفیوں اور تقرریوں میں پبلک سیفٹی و سیکیورٹی کے وزیر کو بھی تبدیل کیا گیا۔


اپوزیشن پیپلز پارٹی کے سربراہ نے پارٹی میٹنگ کے دوران کابینہ میں ہونے والی تبدیلیوں پر اعتراض کرتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن کو اعتماد میں لیے بغیر یہ فیصلے نہیں کیے جانے چاہیے تھے اور موجودہ صورتحال میں ہم ایسی تبدیلی کی حمایت نہیں کرتے۔ کہا جارہا ہے کہ جنوبی کورین صدر نے نئے وزیراعظم اور وزیرخزانہ کا تقرر کرکے اپنی گرتی ہوئی مقبولیت کو کچھ حد تک بہتر بنانے کی کوشش کی ہے۔

جنوبی کوریا کی حکومت ان دنوں ’چوئے گیٹ‘ اور ’چوئے سونامی‘ کے اسکینڈل کی زد میں ہے اور جنوبی کوریا کے صدر کی پرانی واقف کار اور مشیر60 سالہ چوئے سون سل کی جانب سے اپنے ذاتی مفاد کیلیے حکومتی معاملات میں عمل دخل کی اطلاعات سامنے آنے کے بعد سے خاتون صدر پارک جیون ہے کو مسلسل تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

رواں ہفتے31 اکتوبر کو پولیس نے صدر کی خاتون دوست چوئے سون سل کو بھی حراست میں لیا تھا جن پر الزامات ہیں کہ انھوں نے کورین صدر سے دوستی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے اپنے ذاتی اداروں کیلیے کارپوریٹ خزانے سے رقم حاصل کی۔ علاوہ ازیں ان پر ریاستی فنڈز میں خوردبرد اور صدارتی اختیارات میں بھی اپنی مرضی شامل کرنے کاانکشاف ہواہے۔

کرپشن اسکینڈل سامنے آنے کے بعد سے جنوبی کورین عوام اور اپوزیشن میں شدید غم و غصہ دیکھا جارہا ہے، اسی دوران صدر پارک نے کورین وزیراعظم وانگ کیوآن کو برطرف کرکے ایک سینئر صدارتی سیکریٹری کم بیونگ جون کو نیا وزیراعظم مقرر کردیا۔