لاہور ہائیکورٹ کا مریم نواز کو پاسپورٹ واپس کرنے کا حکم 

لاہور ہائیکورٹ کا مریم نواز کو پاسپورٹ واپس کرنے کا حکم 

لاہور: لاہور ہائیکورٹ نے پاکستان مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز شریف کو پاسپورٹ واپس کرنے کا حکم دیدیا ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس امیر بھٹی کی سربراہی میں 3 رکنی فل بینچ نے پاکستان مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز کی پاسپورٹ واپسی کیلئے درخواست پر سماعت کی۔ 

چیف جسٹس نے وکیل امجد پرویز سے استفسار کیا کہ کیا مریم نوازنے پہلے بھی پاسپورٹ واپسی کی درخواستیں دائر کی تھیں؟ جس پر وکیل نے بتایا کہ موجودہ درخواست کی روشنی میں پرانی درخواستیں غیر موثر ہو چکی ہیں۔ 

امجد پرویز نے عدالت کو بتایا کہ مریم نواز کو پاسپورٹ جمع کرانے پر ضمانت ملی، 4 سال ہو گئے لیکن ابھی تک چوہدری شوگر ملز کا کوئی ریفرنس نہیں آیا، اگر یہ کیس فائل کرتے اور مریم اس کا دفاع کرتیں تو صورتحال مختلف ہوتی۔ 

ان کا کہنا تھا کہ کسی کی نقل و حرکت کو روکنا بنیادی حقوق کا معاملہ بھی ہے، مریم چاہتی تھیں کہ کیس کے دفاع میں آتیں، لمبی تاخیر کرنا قانون کے غلط استعمال کے مترادف ہے، لمبی تاخیر پر عدالتیں بغیر میرٹ دیکھے کیس ختم کرا دیتی ہیں۔

لاہور ہائیکورٹ نے پاکستان مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر کی درخواست منظور کرتے ہوئے مریم نواز کا پاسپورٹ انہیں واپس کرنے کی ہدایت کر دی۔ 

مصنف کے بارے میں