چین کا بحیرہ زرد کا 1300کلو میٹر کا سمندری راستہ بند کرنے کا اعلان

چین کا بحیرہ زرد کا 1300کلو میٹر کا سمندری راستہ بند کرنے کا اعلان

بیجنگ:  چین نے بحری جنگی مشقوں کیلیے بحیرہ زرد کے 1300کلو میٹر کے سمندری علاقے کو ہر طرح کی بحری جہازوں کی آمدو رفت کیلیے بند کر دیا -


تفصیلات کے مطابق، چینی ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ  مذکورہ علاقے کو 8 دن کیلیے بند کیا گیا ہے۔ اس سمندری علاقے میں چین کا اپنا تیار کردہ پہلا ایئر کرافٹ کیریئر 'لیاؤننگ'جنگی مشقیں کرے گا۔

 دوسری طرف امریکا کیلیے تویہی پریشانی کچھ کم نہیں تھی کہ چین نے بحیرہ جنوبی چین کے سمندری علاقے میں اپنا کنٹرول قائم کر رکھا ہے، مگر یہ تو اْس کے وہم و گمان میں بھی نہیں تھا کہ سیکڑوں مربع کلومیٹر پر محیط ایک اور سمندری علاقے کو چین ایک دن اچانک بند کر دے گا۔

چین کے دیگر دشمنوں کی طرح امریکا کے لیے بھی یہ خبر ایک تہلکہ خیز انکشاف ثابت ہوئی ہے کہ اس نے بحری جنگی مشقوں کیلیے بحیرہ زرد کے 1300کلو میٹر کے سمندری علاقے کو ہر طرح کے بحری جہازوں کی آمدو رفت کیلیے بند کر دیا ہے۔