نوجوان طالب علم نے 19 ویں منزل سے چلانگ لگا کر زندگی کا خاتمہ کر لیا

ممبئی : بھارتی شہر ممبئی میںانجینئرنگ کالج کے23سالہ پوسٹ گریجوایٹ طالب علم نے ہوٹل کی 19ویں منزل پر اپنے کمرے سے کود کر جان دیدی۔ خودکشی سے چند منٹ قبل نوجوان نے فیس بک پر 1.43منٹ کی لائیوویڈیو جاری کی جس میں اس نے کسی کی زندگی ختم کرنے کی طریقے کی نشاندہی کی تھی۔نوجوان ممبئی کے تاج لینڈز اینڈ ہوٹل میں رہائش پزیر تھا۔واقعے کے بعد طالب علم کو شدید زخمی حالت میں ہسپتال لے جایا گیا مگر وہ راستے میں ہی ہلاک ہو چکا تھا تاہم واقعے کی مزید تحقیقات کا آغازکر دیا گیا ہے۔

نوجوان طالب علم نے 19 ویں منزل سے چلانگ لگا کر زندگی کا خاتمہ کر لیا

ممبئی : بھارتی شہر ممبئی میں انجینئرنگ کالج کے23سالہ پوسٹ گریجوایٹ طالب علم نے ہوٹل کی 19ویں منزل پر اپنے کمرے سے کود کر جان دیدی۔ خودکشی سے چند منٹ قبل نوجوان نے فیس بک پر 1.43منٹ کی لائیوویڈیو جاری کی جس میں اس نے کسی کی زندگی ختم کرنے کی طریقے کی نشاندہی کی تھی۔نوجوان ممبئی کے تاج لینڈز اینڈ ہوٹل میں رہائش پزیر تھا۔واقعے کے بعد طالب علم کو شدید زخمی حالت میں ہسپتال لے جایا گیا مگر وہ راستے میں ہی ہلاک ہو چکا تھا تاہم واقعے کی مزید تحقیقات کا آغازکر دیا گیا ہے۔


بھارتی میڈیا کے مطابق ارجن بھردواج نے اپنے کمرے کی کھڑی کا شیشہ توڑ کر چھلانگ لگا دی تاہم اس کی جیب سے کاغذ کا ایک ٹکرا ملا ہے جس کے مطابق نوجوان نے ذہنی دباو¿ کی وجہ سے یہ انتہائی قدم اٹھایا تاہم اس نے کسی کو اپنی پریشانی کا ذمہ دار قرار نہیں دیا۔کاغذ پر اس نے یہ حرکت کرنے پر والدین اور دوستوں سے معافی مانگتے ہوئے لکھا ہے کہ ذہنی دباو¿ کی وجہ سے وہ اپنی زندگی کا خاتمہ کرنے پر مجبور ہے۔

پولیس حکام کا کہنا تھا کہ ارجن نے ہوٹل سے چھلانگ لگانے سے قبل اپنی ویڈیو ریکارڈ کی جس میں ایک تحریر لکھ کر جیب میں ڈالی اور پھر شراب نوشی کی ، ویڈیو میں اسے سگریٹ نوشی کرتے اور بیکن پاستا کھاتے بھی دیکھا جا سکتا ہے تاہم بعد میں اس نے اپنے دوستوں کو خدا حافظ کہہ کر یہ کہتے ہوئے ویڈیو ختم کر دی کہ چھلانگ لگاتے وقت ریکارڈنگ نہیں کر سکتا “۔