آفریدی کی کشمیر پر ٹوئیٹ، گوتم گھمبیر کی تنقید پر ڈی جی آئی ایس پی آر کا کرارا جواب

آفریدی کی کشمیر پر ٹوئیٹ، گوتم گھمبیر کی تنقید پر ڈی جی آئی ایس پی آر کا کرارا جواب

قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان شاہد آفریدی مقبوضہ کشمیر میں ہونے والی بھارتی فوج کی دہشتگردی پر خاموش نہ رہ سکے اور کہا کہ عالمی طاقتیں اس خونریزی کو روکنے کیلئے کوشش کیوں نہیں کر رہیں ۔


تفصیلات کے مطابق پاکستانی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان شاہد آفریدی نے سوشل میڈیا کی ویب سائٹ ٹوئیٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ بھارتی فوج مقبوضہ کشمیر میں نہتےشہریوں کو گولیوں کا نشانہ بنا رہی ہے جو قابل مذمت ہے۔پیغام میں شاہد آفریدی کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیرمیں حق خودارادیت اورآزادی کیلئےآواز بلند کرنےوالے معصوم کشمیریوں کو گولیوں کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ اور دیگر عالمی قوتیں اس خون ریزی کو روکنے کیلئے اقدامات کیوں نہیں کررہیں۔

شاہد آفریدی کی ٹوئیٹ کی دیر تھی کہ بھارتی میڈیا اور سوشل میڈیا پر طوفان کھڑا ہوگیا اور بھارتیوں نے بوم بوم آفریدی پر تنقید شروع کردی۔

گوتم نے لکھا، شاہد آفریدی کی کشمیر اور اقوام متحدہ سے متعلق ٹوئیٹ پر کیا کہنے کو رہ جاتا ہے؟ آفریدی اقوام متحدہ کی طرف دیکھ رہے ہیں، جو ان کی ڈکشنری میں 'انڈر 19' کے زمرے میں آتا ہے۔ میڈیا سکون سے رہے، شاہد آفریدی نو بال پر آؤٹ کا جشن منارہے ہیں۔

گوتم گھمبیر کی اس ٹوئیٹ کے بعد پاکستانی بھی شاہد آفریدی کے دفاع کو آگئے، حتیٰ کہ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل آصف غفور نے بھی اپنے ڈاتی اکاؤنٹ سے ٹوئیٹ کرکے گوتم گھمبیر اور بھارتیوں کو کرارا جواب دے ڈالا۔میجر جنرل آصف غفور نے ایک میچ کی ویڈیو بھی پوسٹ کی۔ میجر جنرل آصف غفور نے شاہد آفریدی کو اپنا ہیرو قرار دیتے ہوئے کہا 'برائے مہربانی اپنی آگ مقامی طور پر ہی بجھائیں، شاہد آفریدی ہمارا قومی ہیرو اور آواز ہے۔

جواباً شاہد آفریدی نے ڈی جی آئی ایس پی آر کے پیغام کو ری ٹوئیٹ کرتے ہوئے ایک پرانی تصویر شیئر کی، جس میں وہ بھارتی فینز اور پرچم کے ساتھ تصویر بنواتے نظر آئے۔

اس تصویر کے ساتھ شاہد آفریدی نے لکھا، ہم سب کی عزت کرتے ہیں اور یہ ایک کھلاڑی کی پہچان ہے لیکن جب بات انسانی حقوق کی ہو تو ہم بے گناہ کشمیریوں کے لیے بھی ویسے ہی انسانی حقوق کی امید رکھتے ہیں۔

واضح رہے کہ رواں ہفتے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج نے سرچ آپریشن کے نام پر معصوم لوگوں پر گولیاں چلادیں جبکہ بعدازاں جنازوں میں شریک افراد پر بھی پیلٹ گنوں سے فائر کیے گئے، ان واقعات میں 15 سے زائد بے گناہ کشمیری شہید جبکہ 100 سے زائد زخمی ہوچکے ہیں۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں