کورونا کے وار جاری، ملک بھر میں 2708 افراد متاثر

کورونا کے وار جاری، ملک بھر میں 2708 افراد متاثر
ملک بھر میں کورونا سے ہلاکتوں کی تعداد 40 ہو گئی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔فائل فوٹو

اسلام آباد: پاکستان میں مزید 258 افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق کے بعد کیسز کی مجموعی تعداد 2708 تک پہنچ گئی جبکہ مزید 3 افراد جاں بحق ہوگئے جس کے بعد ہلاکتوں کی تعداد 40 ہوگئی۔


سندھ میں 839، پنجاب میں 1072، خیبرپختونخوا میں 343، گلگت بلتستان میں 193، بلوچستان میں 175، اسلام آباد میں 75، آزاد کشمیر میں 11 افراد کرونا وائرس سے متاثر ہوئے جبکہ ملک بھر میں 130 افراد صحتیاب ہوگئے۔

اب تک کورونا وائرس سے پنجاب میں 11 ہلاکتیں ہوچکی ہیں جب کہ سندھ میں 14، خیبرپختونخوا 11، گلگت بلتستان 3 اور بلوچستان میں ایک شخص جاں بحق ہوچکا ہے۔ پنجاب کے ضلع لاہور میں 4، راولپنڈی 3 جبکہ رحیم یار خان اور فیصل آباد میں ایک ایک ہلاکت ہوئی ہے۔ سندھ میں تمام ہلاکتیں کراچی میں ہوئی ہیں۔

محکمہ صحت پنجاب کے ترجمان قیصر آصف نے صوبے میں 149 نئے کیسز کی تصدیق کی جس کے بعد صوبے میں متاثرین کی تعداد ایک ہزار عبور کر کے 1072 ہوگئی۔ نئے کیسز میں کیمپ جیل لاہور کے 3 قیدی بھی شامل ہیں۔

 سندھ میں 69 نئے کیسز کی تصدیق کی گئی جس کے بعد صوبے میں مریضوں کی مجموعی تعداد 839 ہوگئی ہے۔

میران یوسف نے کیسز کی تفصیلات کے بارے میں بتایا کہ کراچی میں 6، حیدرآباد میں 14 اور گھوٹکی میں تبلیغی جماعت سے مقامی طور پر منتقل ہونے والے 2 نئے کیسوں کی تصدیق ہوئی۔ ان نئے کیسز کے بعد سندھ کی مجموعی تعداد کو اگر شہروں کے حساب سے دیکھیں تو کراچی اس وقت 342 کیسز کے ساتھ سب سے آگے ہے، اس کے بعد حیدرآباد میں 151، شہید بینظیر آباد میں 6، گھوٹکی میں 2، دادو اور جیکب آباد میں ایک ایک کیس رپورٹ ہوا ہے۔

سندھ میں گزشتہ روز مزید 3 مریض جاں بحق ہو گئے۔ وزیر صحت ڈاکٹر عذرا پیچوہو نے بھی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ کراچی میں مزید 2 افراد اور حیدر آباد میں ایک مریض مہلک وائرس کا شکار بن گئے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ کراچی میں جاں بحق مریضوں کی عمریں 80 اور 60 سال تھیں جن کے یکم اپریل کو کورونا وائرس کے ٹیسٹ بھی مثبت آئے تھے، دونوں مریضوں میں سے ایک کو عارضہ قلب اور دوسرے مریض کو گردوں کے مسائل کا سامنا تھا۔

مزید براں سکھر میں 273 اور لاڑکانہ میں 7 کیسز ایسے ہیں جو ایران سے آنے والے زائرین ہیں۔ ان تمام 783 کیسز میں 438 کیسز ایسے ہیں جو مقامی طور پر منتقل ہوئے ہیں۔ بعد ازاں میران یوسف نے مزید 47 کیسز کی تصدیق کی۔ان کا کہنا تھا کہ نئے کیسز میں سے 38 کراچی، 5 ٹنڈو محمد خان، ایک حیدر آباد، 2 جامشورو اور ایک بدین میں سامنے آیا۔

نئے کیسز کے بعد مجموعی تعداد 839 میں 438 کیسز ایسے ہیں جو مقامی طور پر منتقل ہوئے ہیں۔جبکہ صوبے بھر میں اب تک 65 افراد کورونا وائرس سے صحت یاب ہوچکے ہیں۔

خیبر پختونخوا کے ڈائریکٹوریٹ جنرل ہیلتھ سروسز نے کورونا وائرس کے مزید 32 کیسز کی تصدیق کی جس کے بعد صوبے میں متاثرہ افراد کی تعداد 343 ہوگئی۔  امریکا پلٹ پاکستانی نژاد میاں بیوی سمیت تین افراد میں وائرس کا ٹیسٹ مثبت آگیا۔

ڈپٹی کمشنر نوشہرہ شاہد علی خان کے مطابق میاں بیوی چار ہفتے قبل امریکا سے آئے تھے جبکہ تیسرا مریض رائے ونڈ سے بیٹی کے گھر چترال اکبرپورہ آیا تھا۔ صوبائی وزیر صحت کی جانب سے جاری سمری کے مطابق صوبے میں اب تک وائرس سے 30 مریض صحت یاب ہوچکے ہیں۔

خیبر پختونخوا میں گزشتہ روز مزید 2 مریض جاں بحق ہوگئے، وزارت صحت خیبر پختونخوا کے مطابق سوات اور مانسہرہ کے رہائشی 65 اور 45 سالہ مریض مہلک وائرس کے باعث انتقال کر گئے جس کے بعد صوبے میں ہلاکتوں کی تعداد 11 ہوگئی ہے۔

ہیلتھ ڈائریکٹوریٹ کورونا وائرس سیل بلوچستان کے ترجمان نے صوبے میں مزید 6 کیسز کی تصدیق کی جس کے بعد متاثرہ افراد کی تعداد 175 ہوگئی۔ انہوں نے کہا کہ صوبے میں کورونا وائرس کے مشتبہ مریضوں کی تعداد 2 ہزار 401 ہے۔ صوبے میں اب تک 17 افراد صحت یاب بھی ہوچکے ہیں۔

اسلام آباد میں کورونا وائرس کے مزید 13 کیسز سامنے آئے ہیں جو سرکاری پورٹل پر رپورٹ کئے گئے، پورٹل کے مطابق وفاقی دارالحکومت میں کیسز کی مجموعی تعداد 75 ہوگئی ہے۔

گلگت بلتستان میں بھی مزید 6 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جس کے بعد علاقے میں کیسز کی مجموعی تعداد 193 ہوگئی ہے۔ گلگت بلتستان کے مشیر اطلاعات شمس میر نے کہا کہ نئے تصدیق شدہ مریضوں کا تعلق استور، نگر اور گلگت سے ہے۔ جبکہ گلگت بلتستان حکومت کے ترجمان نے بتایا کہ 8 مریض صحت یاب ہوچکے ہیں۔

سرکاری اعداد و شمار کے مطابق جمعہ کو آزاد جموں و کشمیر میں بھی کورونا وائرس کے مزید 2 نئے کیسز سامنے آئے، اس طرح وادی میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد 11 ہوگئی ہے، آزاد کشمیر میں ایک پانچ سالہ بچی میں بھی کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے جس کے بعد وہ ملک میں کورونا کی سب سے کم عمر مصدقہ مریضہ بن گئی ہیں۔

آزاد کشمیر کے وزیر صحت ڈاکٹر نجیب نقی نے بتایا کہ بچی کا تعلق بھمبر ہے جس کی والدہ اور ایک بہن پہلے ہی سے کورونا سے متاثر ہیں اور انہیں آئسولیشن وارڈ بھمبر میں رکھا گیا ہے۔ ان کے مطابق متاثرہ بچی قرنطینہ سنٹر بھمبر میں تھی اور اب اس کو آئسولیشن وارڈ میں منتقل کر دیا گیا ہے۔