کورونا کے تشویشناک مریضوں میں اضافہ ہوگیا: اسد عمر

کورونا کے تشویشناک مریضوں میں اضافہ ہوگیا: اسد عمر
کیپشن:   کورونا کے تشویشناک مریضوں میں اضافہ ہوگیا: اسد عمر سورس:   file

اسلام آباد: ملک میں کورونا وائرس کی تیسری لہر انتہائی خطرناک صورتحال اختیار کرگئی ہے۔ وفاقی وزیر منصوبہ بندی اور این سی او سی کے سربراہ اسد عمر کا کہنا ہے  کہ  کورونا وائرس کے تشویش ناک حالت والے مریضوں کی تعداد 3 ہزار 568 رہی جو کہ کورونا شروع ہونے کے بعد سے اب تک کا ریکارڈ اضافہ ہے۔

وفاقی وزیر اسد عمر نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ کورونا وائرس کی ایس او پیز پر سختی عمل درآمد کرنے کی ضرورت ہے۔انہوں نے شہریوں سے اپیل کی ہے کہ مہربانی کر کے کورونا ایس او پیز پر عمل کریں اور ایس او پیز پر عمل درآمد کروانے کیلئے انتظامیہ سے تعاون کریں۔

واضح رہے کہ ملک میں کورونا وائرس کی تیسری لہر جاری ہے۔ کورونا مریضوں کی تعداد کے حوالے سے مرتب کی گئی فہرست میں پاکستان 31 ویں نمبر پر ہے۔

پاکستان میں کورونا کی وباء کے باعث اسپتالوں پر دباؤ میں اضافہ ہوگیا ہے۔ این سی او سی کے مطابق 24 گھنٹے کے دوران انتقال کرنے والے 24 افراد وینٹی لیٹرز پر تھے۔

نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر  کے آج کے اعداد و شمار میں بتایا گیا ہے کہ پاکستان میں گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران کورونا وائرس کے مزید 5 ہزار 20 کیسز سامنے آئے ہیں۔

کورونا سے مزید 81 افراد  زندگی کی بازی ہار گئے۔  3 ہزار 367 مریض شفایاب ہو گئے جبکہ مثبت کیسز آنے کی شرح 9 فیصد ہو گئی ہے۔