افغان طالبان کے ہاتھوں یونیورسٹی طالبعلم کو سرعام پھانسی

کابل: افغان صوبے وردک کے ترجمان گورنر کے مطابق کابل پولی ٹیکنیک یونیورسٹی میں چوتھے سال کے طالبعلم فیض الرحمان کو وردک جاتے ہوئے طالبان نے طالبان انٹیلی جنس رہنما کے قتل کے الزام میں پکڑا تھا۔ مقامی بااثر افراد نے فیض الرحمان کی بازیابی کی کوششیں کیں، جو ناکام رہیں تھیں۔ طالبان نے گذرے جمعہ کو فیض الرحمان کو سرعام پھانسی دیدی ہے۔ افغان وارت داخلہ نے بھی واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملزمان کو پکڑنے کے لئے تحقیقات کا آغاز کردیا ہے۔

مصنف کے بارے میں