انڈونیشیا میں پائی جانے والی مرغی کو دنیا کی کالی ترین مرغی کہا جاتا ہے

جاوا: انڈونیشیا میں پائی جانے والی اس مرغی کو دنیا کی کالی ترین مرغی کہا جاسکتا ہے جو سر سے پیر تک سیاہ ترین ہے اور اگر آپ اس پر بھی حیران نہیں ہیں تو جان لیجیے کہ اس کا حلق اور اندرونی اعضا تک سیاہ ہیں۔

انڈونیشیا میں پائی جانے والی مرغی کو دنیا کی کالی ترین مرغی کہا جاتا ہے

جاوا: انڈونیشیا میں پائی جانے والی اس مرغی کو دنیا کی کالی ترین مرغی کہا جاسکتا ہے جو سر سے پیر تک سیاہ ترین ہے اور اگر آپ اس پر بھی حیران نہیں ہیں تو جان لیجیے کہ اس کا حلق اور اندرونی اعضا تک سیاہ ہیں۔


گمان ہوتا ہے کہ مرغی کو باہر اور اندر سے سیاہی میں ڈبویا گیا ہے۔ اس کی وجہ ایک کم کم ہونے والی جینیاتی کیفیت ہے جسے ’’فائبرومیلانوسس‘‘ کہتے ہیں لیکن یہ کیفیت جانور کے لیے مضر اور ہلاکت خیز نہیں ہوتی البتہ اسے سیاہ ترین رنگت دیتی ہے۔ اس مرض میں مرغی کے اندرونی ٹشو اور اعضا بھی کالے ہوجاتے ہیں اور مرغی کے چوزے اسی کیفیت کے ساتھ پیدا ہوتے ہیں۔

انڈونیشیا میں جاوا کے علاقے میں 800 سال پرانی روایات میں اس کا ذکر ملتا ہے جسے امیر لوگ پالا کرتے تھے۔ اس کا خون بھی انتہائی سیاہ ہوتا ہے جو انڈونیشین کے عقیدے کے مطابق بھوتوں کو بھگانے، قوت حاصل کرنے اور دولت جمع کرنے کے کام آتا تھا۔