عاصمہ رانی قتل کیس : ملزم شاہ زیب نے بڑا اعتراف کرلیا

عاصمہ رانی قتل کیس : ملزم شاہ زیب نے بڑا اعتراف کرلیا

پشاور: میڈیکل کی طالبہ عاصمہ رانی قتل کیس میں گرفتار ملزم شاہ زیب کو ایک روزہ پولیس ریمانڈ ختم ہونے کے بعد کوہاٹ جیل منتقل کردیاگیا جبکہ پولیس کا دعویٰ ہے کہ ملزم نے مرکزی ملزم مجاہد کو فرار کرانے میں مدد کا اعتراف کرلیا ہے۔


تفصیلات کے مطابق کوہاٹ میں قتل کی گئی ڈاکٹر عاصمہ رانی کیس میں مرکزی مفرور ملزم مجاہد آفریدی کے دوست اور معاون شاہ زیب کو ایک روزہ جسمانی ریمانڈ ختم ہونے کے بعد جیل بھیج دیاگیا ہے۔پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ تفتیشی ٹیم کے سامنے شاہ زیب نے مجاہد کو فرار کرانے میں مدد کرنے کا اعتراف کر لیا ہے۔پولیس کے مطابق ملزم کی نشاندہی پر واردات میں استعمال ہونے والی موٹر سایکل بھی شاہ زیب کے گھر سے برآمد کی گئی ہے جبکہ مجاہد کو فرار کرانے میں استعمال ہونے والی کار بھی قبضہ میں لے لی گئی ہے۔دوسری جانب شاہ زیب کے گھروالوں کا کہنا ہے کہ ان کے بیٹے کو پھنسایا جارہا ہے اور ان کا بیٹا بےگناہ ہے۔

خیال رہے کہ کوہاٹ میں قتل ہونے والی ایوب میڈیکل کالج کی طالبہ عاصمہ رانی کے قتل کے مرکزی ملزم مجاہد آفریدی کے قریبی ساتھی شاہ زیب کو گزشتہ دنوں گرفتار کیا گیا تھا۔پولیس کا کہنا تھا کہ مطابق ملزم شاہ زیب نے واردات کے بعد مجاہد کو فرار ہونے میں مدد فراہم کی۔