اورنج لائن ٹرین کے قرضوں اور سود کی حیران کن تفصیلات سامنے آ گئیں

اورنج لائن ٹرین کے قرضوں اور سود کی حیران کن تفصیلات سامنے آ گئیں

لاہور : اورنج لائن میٹرو ٹرین منصوبے کیلئے حاصل کیے گئے قرض اور سود کی ادائیگی کی تفصیلات سامنے آگئیں ‘ 9 کھرب 53 ارب سے زائد رقم کا مقروض صوبہ پنجاب سالانہ 6 ارب 28 کروڑ روپے قرض پر سود ادا کرے گا۔


ذرائع کے مطابق پنجاب حکومت 12 سال تک سالانہ 40 اعشاریہ 62 ملین امریکی ڈالر پہلی ملکی لائٹ ریل کے قرض پر سود ادا کرے گی۔ اورنج لائن میٹرو ٹرین منصوبے سے پنجاب کی معیشت پر انتہائی سنگین اثرات مرتب ہونگے،خادم اعلی کا منصوبہ 2036 تک پنجاب کی معیشت کا جنازہ نکالے گاسابق پنجاب حکومت کی جانب سے اورنج لائن میٹرو ٹرین کیلئے 1.62 بلین ڈالر کا معاہدہ ایگزم بنک کے ساتھ کیا گیا۔

سابق پنجاب حکومت نے اپوزیشن مطالبات کے باوجود اورنج لائن ٹرین کا معاہدہ پبلک نہیں کیا تھا، آڈیٹر جنرل آف پاکستان کی بارہا ہدایت کے باوجود پنجاب ماس ٹرانزٹ اتھارٹی نے معاہدہ فراہم نہیں کیا تھا، سرکاری اعدادوشمار کے مطابق اورنج لائن ٹرین پر تین کھرب سے زائد رقم خرچ ہو چکی ہے ۔

ذرائع نے بتایا ہے کہ محکمہ ٹرانسپورٹ کی جانب سے اورنج ٹرین کے کرائے اور قرض پر ایک رپورٹ ایوان وزیر اعلی کو ارسال کی گئی ہے جس میں تمام تر تفصیلات سے متعلق ایوان وزیر اعلی کو   آگاہ  کر دیا  گیا ہے ۔دوسری جانب بڑھتے ہوئے سود اور جرمانے کی ادائیگی پر سیکرٹری خزانہ سے موقف لیا گیا لیکن انہوں نے اس پر موقف دینے سے گریز  کیا ہے ۔