غیر مسلح فلسطینی کی مرتے ہوئے وڈیو بنانے کے جرم میں اسرائیلی فوجی مجرم قرار

غیر مسلح فلسطینی کی مرتے ہوئے وڈیو بنانے کے جرم میں اسرائیلی فوجی مجرم قرار

ہیبرون: ایک زخمی غیر مسلح فلسطینی حملہ آور کو قتل کرنے کے جرم میں اسرائیل کی فوجی عدالت نے ایک اسرائیلی فوجی کو مجرم قرار دیا ہے۔ اس فوجی نے غیر مسلح فلسطینی کی مرتے ہوئے وڈیو بنائی تھی۔


20 سالہ اسرائیلی فوجی، سارجنٹ الور ازاریہ نے 21 سالہ فلسطینی عبدالفتح الشریف کو اس وقت سر میں گولی مار کر ہلاک کر دیا تھا جب عبدالفتح الشریف سڑک پر پڑے ہوئے تھے اور وہ ہلنے کے قابل بھی نہیں تھے۔

یہ واقعہ غرب اردن کے قصبے الخلیل (ہیبرون) میں مارچ 2016 میں پیش آیا تھا جس میں ایک دوسرے اسرائیلی فوجی کو چاقو کے وار سے زخمی کر دیا گیا تھا۔

سماعت کے دوران سارجنٹ الور ازاریہ کا موقف تھا کہ انھیں شک تھا کہ عبدالفتح الشریف نے خود کش جیکٹ پہن رکھی تھی۔ لیکن استغاثہ کا کہنا تھا کہ سارجنٹ ازاریہ نے عبدالفتح الشریف کو گولی مارنے کا قدم انتقام کے جذبے سے اٹھایا۔

نیوویب ڈیسک< News Source