شام میں روسی طیاروں کی بمباری سے 30 شہری ہلاک

 شام میں روسی طیاروں کی بمباری سے 30 شہری ہلاک

دمشق: شام کے دارالحکومت دمشق میں روسی لڑاکا طیاروں کی بمباری کے نتیجے میں خواتین اور بچوں سمیت 30 شہری ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے ہیں، کئی افراد منہدم ہونے والی عمارتوں کے ملبے تلے دبے ہوئے ہیں جس کی وجہسے ہلاکتوں میں اضافہ کا خدشہ ظاہر کیا رہا ہے۔


ایک خبر رساں ادارے کے مطابق روسی جیٹ طیاروں نے یہ بمباری دمشق کے مشرقی علاقے مسرابا میں کی یہ علاقہ باغیوں کے زیر قبضہ ہے جہاں بڑی تعداد میں لوگ آباد ہیں اور روسی طیاروں نے اسی گنجان آباد علاقے میں فضائی حملے کیے ہیں۔

انسانی حقوق کے نگراں ادارے المرصد کا کہنا ہے کہ اس بمباری کے نتیجے میں 20 افراد ہلاک ہوئے ہیں جن میں اکثریت خواتین اور بچوں کی ہے۔رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ روسی طیاروں نے دمشق کے اطراف اور نواح میں قصبوں پر بھی فضائی حملے کیے جس میں کم از کم 10 شہریوں کی ہلاکت ہوئی ہے جب کہ ہلاکتوں میں اضافے کا امکان ہے۔

مذکورہ حملوں میں متعدد افراد زخمی ہیں اور کچھ زخمیوں کو ملبے سے نکال کر اسپتال منتقل کردیا گیا ہے زخمیوں کے مطابق اب بھی کئی افراد روسی طیاروں کے حملے میں منہدم ہونے والی عمارتوں کے ملبے تلے دبے ہوئے ہیں۔