امریکہ کی کسی بھی غیر معمولی حرکت کا سامنا کرنے کیلئے تیار ہیں : خرم دستگیر

امریکہ کی کسی بھی غیر معمولی حرکت کا سامنا کرنے کیلئے تیار ہیں : خرم دستگیر

اسلام آباد: وزیر دفاع خرم دستگیر نے کہا ہے کہ امریکا کی کسی بھی غیر معمولی حرکت کا سامنا کرنے کے لیے تیار ہیں جس سے ہمیں نقصان کا اندیشہ ہو،امریکی صدر کی پاکستان مخالف ٹوئٹ کے بعد ملک کی سیاسی و عسکری قیادت نے بھرپور جواب دیا،پاکستان کا دفاع مضبوط ہے اس کے تحفظ بارے کسی قسم کا خوف نہیں ، ابھی امریکا کے ساتھ مل کر آگے چلنا چاہتے ہیں۔


میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خرم دستگیر نے کہا کہ ریکس ٹیلرسن اور جیمز میٹس جب پاکستان آئے تو انہوں نے سفارتی آداب کے تحت بات کی اس میں دھمکی اور توہین کا عنصر نہیں تھا لیکن ٹرمپ اور مائیک پینس کے لہجے میں دھمکی کا عنصر نظر آتا ہے، یہاں دھمکیاں اور توہین کی گئی۔وزیر دفاع نے کہا کہ ہمیں امریکا کے معاملے پر پوری صورتحال کا تجزیہ کرنا ہے اور ٹھنڈے دل کے ساتھ حکمت عملی ترتیب دے رہے ہیں جب کہ اس پر پارلیمان سے گفتگو کی ہے۔

خرم دستگیر نے کہا کہ ہمیں پاکستان کے تحفظ کے بارے میں کسی قسم کا خوف نہیں، پاکستان کا دفاع مضبوط ہے، سوال یہ ہے کہ امریکا واقعی کوئی اس قسم کی غیر معمولی حرکت نہ کردے جس سے ہمیں نقصان ہونے کا اندیشہ ہے اس کے لیے بالکل تیار ہیں لیکن ابھی چاہتے ہیں امریکا کے ساتھ مل کر آگے چلیں۔