مولانا سمیع الحق قتل کیس، ڈرائیور پولی گرافی ٹیسٹ میں جھوٹا بولتا رہا

مولانا سمیع الحق قتل کیس، ڈرائیور پولی گرافی ٹیسٹ میں جھوٹا بولتا رہا
3 افراد کے ڈی این اے کمرے سے ملنے والے ڈی این اے سے میچ کر گئے ہیں، ذرائع۔۔۔۔۔فائل فوٹو

اسلام آباد: ذرائع کے مطابق فرانزک سائنس ایجنسی میں مولانا سمیع الحق کے ڈرائیور احمد شاہ کا پولی گرافی ٹیسٹ کیا گیا جس میں احمد شاہ جھوٹ بولتا رہا۔ذرائع نے بتایا کہ ڈرائیور احمد شاہ سے 2 سوال کیے گئے۔ کیا وہ قتل کرنے والوں کو جانتا ہے؟، ڈرائیور سے دوسرے سوال میں پوچھا گیا کہ کیا وہ قتل کی منصوبہ بندی میں شامل رہا؟۔


ذرائع کا کہنا ہے کہ فرانزک سائنس ایجنسی نے 9 دیگر افراد کے بھی ڈی این اے اور پولی گرافی ٹیسٹ کیے جس میں 3 افراد کے ڈی این اے کمرے سے ملنے والے ڈی این اے سے میچ کر گئے ہیں۔

ذرائع نے مزید بتایا کہ تینوں افراد نے پولی گرافی ٹیسٹ میں سچ بولا اور ان کا قتل سے تعلق نہیں نکلا۔خیال رہے کہ مولانا سمیع الحق کو 2 نومبر کو راولپنڈی میں ان کی رہائش گاہ پر چھریوں کے وار کرکے قتل کردیا گیا تھا۔