اعتماد کے ووٹ کا معاملہ، (ن) لیگ کے ارکان پنجاب اسمبلی کو لاہور میں رہنے کی ہدایت

اعتماد کے ووٹ کا معاملہ، (ن) لیگ کے ارکان پنجاب اسمبلی کو لاہور میں رہنے کی ہدایت

لاہور: وزیراعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الٰہی کے اعتماد کے ووٹ کے سلسلے میں پاکستان مسلم لیگ (ن) کے تمام ارکان پنجاب اسمبلی کو لاہور میں رہنے کی ہدایت کر دی گئی ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق پاکستان مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنماءاور وفاقی وزیر داخلہ رانا ثناءاللہ کی سربراہی میں پارٹی کا اہم اجلاس ہوا جس میں پنجاب کے تمام ممبران اسمبلی کو لاہور رہنے کی ہدایت کی گئی۔ 

ممبران اسمبلی سے گفتگو کرتے ہوئے رانا ثناءاللہ کا کہنا تھا کہ پنجاب میں کسی وقت بھی ایسی صورت بن سکتی ہے کہ تمام ممبران اسمبلی کی ضرورت پڑے، انہوں نے تمام ممبران اسمبلی کے تحفظات سن کر فوری حل کرنے کی یقین دہانی بھی کروائی۔

رانا ثناءاللہ نے کہا کہ مریم نواز شریف کی سینئر نائب صدر اور چیف آرگنائزر بننے کے بعد پارٹی مزید متحرک ہو گی جبکہ پاکستان مسلم لیگ (ن) میں تحفظات ضرور ہوتے ہیں مگر کسی قسم کی گروپنگ نہیں ہے۔ 

انہوں نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کے تاحیات قائد نوازشریف کی قیادت میں وزیراعظم شہباز شریف ملک کو بحران سے نکالنے کیلئے کوشاں ہیں اور موجودہ وفاقی حکومت عوام کے مسائل کو دیکھتے ہوئے بڑے فیصلے کر رہی ہے۔ 

وزیر داخلہ نے ایک بار پھر نواز شریف کی جلد وطن واپسی کا دعویٰ کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان اسمبلیاں تحلیل کرنے کی بات کرتے ہیں لیکن عملی قدم نہیں اٹھاتے۔ 

ان کا کہنا تھا کہ عمران خان صرف بڑھکیں مارتے ہیں، اسمبلیاں تحلیل نہیں ہوں گی اور عام انتخابات وقت پر ہوں گے مگر اس سے قبل ہمیں اپنے اپنے حلقوں میں مزید متحرک ہونا ہے، ہم ملک کو بہتر بنانے کیلئے کوشاں ہیں۔

مصنف کے بارے میں