آرمی چیف کی فوج اور آئی ایس آئی کو سیاست سے دور رہنے کی ہدایت

آرمی چیف کی فوج اور آئی ایس آئی کو سیاست سے دور رہنے کی ہدایت

اسلام آباد: آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے اپنے تمام کمانڈرز اور اہم افسران بشمول آئی ایس آئی سے وابستہ حکام کو سیاست سے دور رہنے اور سیاستدانوں سے بات چیت سے گریز کی تازہ ہدایات جاری کر دی ہیں۔ 

تفصیلات کے مطابق یہ ہدایات عمران خان کی زیر قیادت پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی جانب سے ملٹری اسٹیبلشمنٹ کے خلاف پروپیگنڈے کے تناظر میں جاری کی گئی ہیں، جس میں آئی ایس آئی کے بعض عہدیداروں پر الزام عائد کیا گیا ہے کہ وہ پنجاب میں آئندہ ضمنی انتخابات میں پی ٹی آئی کو نقصان پہنچانے کیلئے سیاسی جوڑ توڑ کر رہے ہیں۔

نجی ٹی وی کے مطابق دفاعی ذرائع نے ان الزامات پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ پی ٹی آئی کے رہنماءآئی ایس آئی کے جس سیکٹر کمانڈر کو بدنام کر رہے ہیں، وہ 15 دن سے زائد عرصے سے لاہور میں موجود ہی نہیں اور وہ پیشہ ورانہ کام کے سلسلے میں اسلام آباد میں ہیں۔

واضح رہے کہ پی ٹی آئی کی رہنما اور سابق وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے حال ہی دئیے گئے اپنے بیان میں ان کا نام لیتے ہوئے الزام عائد کیا تھا کہ وہ پنجاب کے آئندہ ضمنی انتخابات میں سیاسی جوڑ توڑ میں ملوث ہیں جبکہ ان سے قبل سابق وزیر خارجہ اور پی ٹی آئی کے ڈپٹی چیئرمین شاہ محمود قریشی نے بھی یہ الزام عائد کیا تھا کہ کچھ نادیدہ قوتیں پی ٹی آئی کے خلاف صوبے میں ضمنی انتخابات پر اثر انداز ہونے کیلئے سرگرم ہیں۔

چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان بھی یہ الزام عائد کر چکے ہیں کہ ان کے کچھ امیدواروں نے نامعلوم نمبروں سے ٹیلی فون کالز موصول ہونے کی شکایت کی ہے اور ضمنی انتخابات میں جوڑ توڑ کیلئے ان کی پارٹی کے رہنماؤں اور کارکنوں پر دباؤ ڈالا جا رہا ہے۔

دفاعی ذرائع کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی کو چاہیے کہ وہ سیکیورٹی اسٹیبلشمنٹ کو بدنام کرنے کے بجائے شواہد پیش کرے اور اگر ذرہ بھر بھی ثبوت فراہم کئے گئے تو ذمہ داروں کیخلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

مصنف کے بارے میں